سعودی عرب کی وزارت حج و عمرہ کے حج کارڈ پراجیکٹ کا آغاز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی وزارت حج و عمرہ نے حج کارڈ پراجیکٹ کا آغاز کیا ہے۔ یہ پراجیکٹ اس سال 1444ھ کے حج سیزن کے دوران پیش کیے جانے والے مختلف ڈیجیٹل پیکجز کا حصہ ہے۔ اس منصوبے کا مقصد عازمین کے مقدس سفر میں ان کی عبادات کو آسان بنانے میں ان کی مدد کرنا ہے۔

حج کارڈ کا مقصد حاجیوں کو فراہم کی جانے والی خدمات کو بہتر بنانا ہے، اس کے ذریعے گمشدہ افراد کی رہ نمائی میں سہولت فراہم کرنا اور گروپ کے رہ نما کے ساتھ رابطے میں مدد کرنا ہے۔

حج کارڈ پراجیکٹ

وزارت نے کہا کہ یہ کارڈ دو کاپیوں پر مشتمل ہے۔ پہلی ڈیجیٹل جوحجاج کو "نسک" ایپلی کیشن میں نظر آتی ہے۔اس میں اس کا تفصیلی ڈیٹا ہوتا ہے، جیسے کہ اس کی رہائش کی جگہ، اس کا صحت کا ریکارڈ، اس کا داخلہ شیڈول،اور دیگر خدمات شامل ہیں۔ دوسری کاپی ہر حاجی کو پرنٹ شدہ شکل میں ملتی ہے۔ اس پر QR رسپانس کوڈ کے علاوہ اس کا ڈیٹا، شناختی نمبر، قومیت اور حج کمپنی کا پتہ بھی درج ہوتا ہے۔ حج کارکنان بھی اپنی درخواست کے ذریعے عازمین کے پورے ڈیٹا تک رسائی حاصل کر سکتے ہیں۔

یہ کارڈ کئی ڈیجیٹل خدمات بھی فراہم کرتا ہے، جن میں سب سے نمایاں حجاج کا کارڈ، پیکیج ڈیٹا، صحت کا ڈیٹا، شکایت درج کرنا، خدمات کا جائزہ لینا،حجاج کا نقشہ اور اہم ترین سائٹس کے نقشے شامل ہوتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں