23منٹ حرکت قلب بند رہنے کے باوجود طبہی عملےنے عراقی حاجی کی جان بچا لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب میں ایک عراقی حاجی کے مدینہ منورہ میں آمد کے بعد عارضہ قلب کا شکار ہونے کے بعد طبی امدادی عملے کی فوری مداخلت سے اس کی جان بچالی گئی۔

سعودی عرب کے مقامی میڈیا کے مطابق مسجد نبوی کے ساتھ واقع الصافیہ ارجنٹ کیئر سینٹر میں طبی ٹیموں نے ایک عراقی حاجی کو اس وقت طبی امداد فراہم کی جب اس سینٹر میں لایا گیا۔ طبی امداد دینے سے قبل حاجی کےدل کی حرکت 23 منٹ تک بند رہی۔

مدینہ منورہ ہیلتھ کلسٹر نے بتایا کہ الصافیہ سینٹر کو ایک حاجی کے عارضہ قلب کا شکار ہونے کا کیس موصول ہوا۔ مریض کے دل کی حرکت دھڑکن مکمل طور پر بند تھی۔ جہاں طبی ٹیم نےاس کے دل میں ’ایئر وے‘ کو کھولا، سینے کو دبایا، بجلی کے جھٹکے لگائے۔ اس طرح اس کے دل کی حرکت تئیس منٹ کے بعد بحال ہوئی۔

مریض کی حالت بہتر ہونے کے بعد اسے ایک مربوط طبی ٹیم کے ساتھ کنگ سلمان میڈیکل سٹی منتقل کیا گیا جہاں اسے مزید علاج کی سہولت فراہم کردی گئی ہے۔

خیال رہے کہ رواں سال کے حج سیزن کے موقعے پر مدینہ منورہ میں طبی عملے نے 20 ہزار سے زائد عازمین کو طبی خدمات فراہم کیں۔ اس دوران مختلف ملکوں کے حجاج کرام میں11 کارڈیک کیتھیٹرائزیشن آپریشن، 27 ڈائیلاسز سیشن اور 9 دیگر سرجیکل آپریشن کیے گئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں