.

پیانگ یانگ کی امریکا کو دھمکی؛ میزائل کا جواب میزائل سے دیں گے

بیان سیول ۔ واشنگٹن معاہدے کے بعد سامنے آیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
شمالی کوریا نے دعوی کیا ہے کہ اس کے پاس ایسے اسٹرٹیجک میزائل موجود ہیں کہ جو امریکا تک مار کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

شمالی کوریا کے اس دعوی کو ماہرین ایک 'چال' قرار دے رہے ہیں کیونکہ سیول اور واشنگٹن نے جنوبی کوریا کے میزائیلوں کی رینج بڑھانے کا ایک معاہدہ کیا ہے اور شمالی کوریا نے اپنے نئے دعوی میں اسی معاہدے کا جواب دینے کی کوشش کی ہے۔

شمالی کوریا کی نیشنل ڈیفنس کمیٹی کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ "انقلابی فوج، بشمول اسٹرٹیجک میزائیلوں سے لیس فوج، جنوبی کوریا کی طرح نمائشی اسلحے کی مالک نہیں، بلکہ ہمارے میزائیلوں کی مار جاپان، گوام، اور امریکا کے اندر فوجی اڈے تک ہے۔"

بیان میں اس بات پر زور دیا گیا ہے کہ شمالی کوریا کسی بھی دشمن کا مقابلہ ’جوہری کے بدلے جوہری اور میزائل کے بدلے میزائل‘ سے کرے گا۔ شمالی کوریا کے بارے میں خیال کیا جاتا ہے کہ وہ طویل فاصلے تک مار کرنے والے میزائل بنا رہا ہے، لیکن اس کے دو حالیہ تجربے ناکام ہو گئے تھے۔

شمالی کوریا کے پڑوسی ممالک کا کہنا ہے کہ اپریل دو ہزار نو اور اپریل دو ہزار بارہ میں ہونے والے یہ تجربے طویل فاصلے تک مار کرنے والے تائی پو دونگ دو میزائل نظام سے متعلق تھے۔

ماہرین کا خیال ہے کہ اس نظام کا مقصد مرکزی امریکی سرزمین (ہوائی اور الاسکا کو چھوڑ کر بقیہ امریکی ریاستیں) تک پہنچنا ہے۔ تاہم اس کا ابھی تک کامیاب تجربہ نہیں کیا جا سکا۔ شمالی کوریا جنوبی کوریا اور امریکا کے خلاف سخت بیانات دیتا رہتا ہے۔