.

بحرین اور برطانیہ کے درمیان فوجی تعاون بڑھانے کے لیے دفاعی معاہدہ

کسی جارحیت کی صورت میں بحرین کے دفاع کا وعدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
برطانیہ اور بحرین کے درمیان دفاعی شعبے میں تعاون کے فروغ کے لیے ایک معاہدہ طے پایا ہے جس کے تحت برطانیہ نے کسی بھی غیر ملکی جارحیت کی صورت میں اس خلیجی ریاست کے دفاع کا وعدہ کیا ہے۔

دونوں ممالک کے درمیان اس دفاعی معاہدے پر جمعرات کو لندن میں دستخط کیے گئے ہیں۔اس کے تحت دونوں ممالک نے خفیہ معلومات کے تبادلے، فوجی تعلیم وتربیت ،سائنس اور فنی شعبوں میں تعاون اور مسلح افواج کی مشترکہ تربیت سے اتفاق کیا ہے۔

خلیجی روزنامے دی نیوز کی رپورٹ کے مطابق بحرین کے وزیر خارجہ شیخ خالد بن احمد آل خلیفہ اور برطانوی وزیردفاع فلپ ہامونڈ نے لندن میں منعقدہ ایک تقریب میں دفاعی تعاون کے اس معاہدے پر دستخط کیے۔اس موقع پر بحرین کے ولی عہد اور ڈپٹی سپریم کمانڈرسلمان بن حمد آل خلیفہ بھی موجود تھے۔

بحرین کے ولی عہد نے کہا کہ ''دفاعی معاہدہ دونوں ممالک کے درمیان تاریخی تعلقات کا آئینہ دار ہے''۔اس معاہدے کا مقاصد اندرونی اور بیرونی خطرات کے پیش نظر بحرین کی سکیورٹی کو بڑھانا ہے۔بحرین اپنے پڑوسی ملک ایران پر معاشرے میں فرقہ وارانہ اختلافات کو ہوا دینے کے الزامات عاید کرتا رہا ہے اور اس کی ایران کے ساتھ فرقہ وارانہ بنیاد پر کشیدگی پائی جارہی ہے۔