.

لبنان میں سیاسی کشیدگی کا فائدہ شام اٹھا رہا ہے ہیلری کلنٹن

بیروت حکومت اپنی صفوں سے غیر ملکی ایجنٹ نکال باہر کرے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
امریکی وزیر خارجہ ہیلری کلنٹن کا کہنا ہے کہ شام، لبنان کی کشیدہ سیاسی صورتحال سے فائدہ اٹھانے کی کوشش کر رہا ہے۔ انہوں نے لبنان کی سیاسی قیادت پر زور دیا کہ وہ اپنی صفوں سے غیر ملکی ایجنٹ نکال باہر کریں۔



برطانوی خبر رساں ایجنسی 'رائیٹرز' کے مطابق امریکی وزیر خارجہ نے اپنے بیان میں کہا کہ ان کا ملک سیاسی کشیدگی کے خاتمے کے لئے لبنانی صدر میچل سلیمان کی مساعی کی حمایت کرتا ہے۔ ہیلری کلنٹن نے لبنانی انٹیلی جنس چیف وسام الحسن کی بیروت میں ایک کار بم دھماکے میں ہلاکت کی بھی مذمت کی۔

خیال رہے کہ لبنان میں 19 اکتوبر کو بیروت کےقریب الاشرفیہ کالونی میں کار بم دھماکوں میں لبنانی انٹیلی جنس چیف وسام الحسن جاں بحق ہو گئے تھے۔ واقعے کے بعد ملک بھر میں کشیدگی کی ایک تازہ لہر دوڑ گئی ہے۔ وزیر اعظم نجیب میقاتی پر حکومت چھوڑنے کے لیے دباؤ بھی بڑھ گیا ہے۔



امریکی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ لبنان میں سیاسی خلاء پیدا نہیں ہونا چاہیے کیونکہ اس کا فائدہ شامی حکومت کو پہنچ سکتا ہے۔ ہم لبنان میں سیاسی بحران پر قابو پانے کے لیے صدر میچل سلیمان کی کوششوں کی حمایت کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ لبنان میں اگر کوئی نئی حکومت تشکیل بھی دی جاتی ہے تو اسے نجیب میقاتی ہی کے طرز پر کام کرنا چاہیے، تاہم امریکا، لبنان میں ایک ایسی حکومت کے قیام کی حمایت کرے گا جو عوامی امنگوں پر پورا اترنے کی صلاحیت رکھتی ہو۔ ہیلری کلنٹن نے لبنانی سیاسی جماعتوں پر زور دیا کہ وہ حکومت کی تشکیل میں ایک دوسرے کی مدد کریں اور گڑ بڑ پیدا کرنے والے غیر ملکی ایجنٹوں کو اپنی صفوں سے نکال باہر کریں۔