دہشت گرد منصوبہ بناؤ ۔۔۔ نیویارک یونیورسٹی میں طلباء کو اسائمنٹ

نیویارک پولیس کے احتجاج پر کورس ختم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read
Advertisement
میری ہیلن نے طلبہ کو ہدایت کی کہ وہ اس مشق کو ضابطہ تحریر میں لانے سے پہلے ایک دہشت گرد کی طرح سوچیں تاکہ وہ منصوبے کو رو بعمل لانے، اس میں شرکاء کی تعداد اور مالی امور کا بھی تفصیلی احاطہ کر سکیں۔ بہ قول خاتون انسٹرکٹر ایسی سوچ رکھنے والے طلبہ ہی دراصل حکومت اور سرکاری اداروں کا ایسی دہشت گرد کارروائی پر ردعمل بہتر طور جان سکیں گے۔

نیویارک یونیورسٹی کے اس کورس کا خاتمہ خوشگوار طریقے سے نہیں ہوا کیونکہ نیویارک پولیس نے اسے ایک مضحکہ خیز کارروائی قرار دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ کورس کے فارغ التحصیل انسداد دہشت گردی میں مہارت کے بجائے دہشت گرد بن کر سامنے آنے تھے، تاہم خاتون انسٹرکٹر نے اس سوچ پر تعجب کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ نیویارک پولیس نے اپنے تحفظات مجھے براہ راست کیوں نہیں بتائے حالانکہ متعدد پولیس اہلکار میرے کورس میں شریک تھے۔

نیویارک پولیس نے اس معاملے پر باقاعدہ ردعمل ظاہر کرنے سے گریز کیا ہے۔


مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں