.

امیر قطر کی اطالوی کلب اے سی میلان خرید کرنے میں دلچسپی

سابق اطالوی وزیر اعظم کلب کے حصص بیچنے کو تیار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
قطر کے امیر شیخ حمد بن خلیفہ آل ثانی نے اٹلی کے فٹ کلب اے سی میلان کی خریداری میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے۔

ایک ویب سائٹ گول ڈاٹ کام کی اطلاع کے مطابق کلب کے موجودہ مالک سابق اطالوی وزیراعظم سلویو برلسکونی اس کو فروخت کرنے کے لیے تیار ہیں اور وہ میلان کی ایک عدالت سے ٹیکس فراڈ کے مقدمے میں قید کی سزا پانے کے بعد کلب کی ذمے داریوں سے سبکدوش ہونا چاہتے ہیں۔

ویب سائٹ کے مطابق قطری امیر پچاس کروڑ یورو کی فیس کے عوض اس کلب کو خرید کرنے کے مضبوط امیدوار ہو سکتے ہیں۔البتہ اکتوبر کے اوائل میں اے سی میلان کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا تھا کہ ''کلب کو قطر کے خودمختاری فنڈ یا کسی اور کو فروخت کرنے کا فی الحال کوئی پروگرام نہیں ہے''۔

قبل ازیں اٹلی کے کھیلوں کی خبریں شائع کرنے والے ایک اخبار ''گیزٹا ڈیلو سپورٹ'' نے اطلاع دی تھی کہ سلویو برلسکونی کلب کے تیس فی صد حصص فروخت کرنے پر غور کر رہے ہیں اور اس سلسلہ میں ان کی قطر سے بات چیت کے کئی دور ہو چکے ہیں۔

واضح رہے کہ میلان کی ایک عدالت نے گذشتہ ہفتے سابق اطالوی وزیر اعظم سلویو برلسکونی کو ان کے ٹیلی ویژن چینل میڈیا سیٹ سے متعلق ٹیکس فراڈ کے ایک مقدمے میں قریباً چار سال قید کی سزا سنائی تھی اور ان پر تین سال کے لیے کوئی بھی سرکاری عہدہ رکھنے پر پابندی عاید کر دی تھی۔

سلویو برلسکونی اس عدالتی فیصلے کے خلاف دو اپیلیں دائر کرسکتے ہیں اور ان کی حتمی اپیل مسترد ہونے تک اس سزا پر عمل درآمد نہیں کیا جا سکے گا۔استغاثہ نے عدالت سے انھیں تین سال اور آٹھ ماہ قید کی سزاسنانے کی اپیل کی تھی۔عدالت نے برلسکونی اور ان کے شریک مدعا علیہان کو ایک کروڑ یورو کی رقم ہرجانے کے طور پر ٹیکس حکام کو ادا کرنے کا بھی حکم دیا تھا۔