.

ویٹی کن کی شاہ عبداللہ مرکز برائے مذہبی ڈائیلاگ میں شمولیت

''باہمی احترام اورتفہیم پرمبنی مباحثہ وقت کی ضرورت ہے''

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
رومن کتھولک چرچ کے مرکز ویٹی کن نے سعودی عرب کے فرمانروا شاہ عبداللہ بن عبدالعزیز کے قائم کردہ عالمی مرکز برائے ثقافتی اور مذہبی ڈائیلاگ میں بانی مبصر کے طور پر شمولیت اختیار کرلی ہے۔

شاہ عبداللہ بن عبدالعزیز عالمی مرکز برائے بین المذاہب اور بین الثقافتی ڈائیلاگ آسٹریا کے دارالحکومت ویانا میں 2011ء قائم کیا گیا تھا۔اس کا بڑا مقصد مخلف مذاہب اور ثقافتوں کے پیروکاروں کے درمیان باہمی افہام وتفہیم کے علاوہ انسانی حقوق کے احترام، انصاف ،امن اور مصالحت کو فروغ دینا ہے۔نیز جبروتشدد کو جواز فراہم کرنے کے لیے مذہب کے استعمال کو روکنا ہے۔

رومن کیتھولک چرچ کے ایک نمائندے نے جمعرات کو ویانا میں شاہ عبداللہ عالمی مرکز میں منعقدہ ایک فورم میں شرکت کی ہے۔اس میں سعودی عرب کی جانب سے خارجہ امور کے نائب وزیر شہزادہ عبدالعزیز بن عبداللہ بن عبدالعزیز کے علاوہ سپین اور آسٹریا کے مندوبین بھی شریک تھے۔

ویٹی کن کی کونسل برائے بین المذاہب ڈائیلاگ کے سیکرٹری فادرمیجوئل اینجل آیوسو نے ایک بیان میں کہا کہ ''شاہ عبداللہ مرکز میں ان کی شمولیت سے عالمی سطح پر مذاہب پر مباحث کو فروغ ملے گا''۔انھوں نے کہا کہ باہمی احترام اور تفہیم پر مبنی ڈائیلاگ اور تعاون ہمارے حال اور مستقبل کی ایک اہم ضرورت ہے۔ویٹی کن کے مبصر اور کتھولک چرچ کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے رکن کے طور پرمجھے یہ موقع ملا ہے کہ میں ان اقدار کے فروغ کے لیے شاہ عبداللہ مرکز کی حمایت کروں''۔

شاہ عبداللہ عالمی مرکز برائے ثقافت اور مذہبی ڈائیلاگ کے بورڈ آف ڈائریکٹرز میں دنیا کے پانچ بڑے مذاہب اسلام، یہودیت،عیسائیت ،ہندومت اور بدھ مت کے اعلیٰ نمائندے شامل ہیں۔اس ادارے کا باضابطہ افتتاح 26 نومبر2012ء کو ویانا میں ہوگا۔