.

سعودی عرب مسلح افراد کے حملے میں دو سرحدی محافظ جاں بحق

یمن کی سرحد کے نزدیک قصبے میں گشتی پارٹی پر دھاوا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
سعودی عرب کے یمن کی سرحد کے نزدیک واقع علاقے میں مسلح جنگجوؤں کے حملے میں دو سرحدی محافظ جاں بحق ہو گئے ہیں۔

العربیہ ٹی وی کے نمائندے کی اطلاع کے مطابق دس مسلح حملہ آوروں نے سعودی عرب کے جنوبی صوبہ نجران کے قصبے شرورہ کے نزدیک سرحدی محافظوں پر دھاوا بول دیا تھا۔ یہ قصبہ نجران شہر سے قریباً دو سو کلومیٹر مشرق میں واقع ہے۔

سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے ایک بیان میں بتایا ہے ان حملہ آوروں نے سوموار کو علی الصباح سرحدی محافظوں کی ایک گشتی پارٹی پر فائرنگ کردی تھی جس سے دو محافظ جاں بحق ہو گئے۔ العربیہ نے جاں بحق ہونے والے دونوں سرحدی محافظوں کے نام لانس کارپورل فهد بن حسين فهد الحمندی اور لانس کارپورل محمد بن حسن علی منيع بتائے ہیں۔

سعودی سکیورٹی فورسز نے جوابی کارروائی کر کے حملہ آور دس سعودی جنگجوؤں اور ایک یمنی کو گرفتار کر لیا ہے۔ سرکاری خبر رساں ایجنسی ایس پی اے کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ حملہ آور یمنی علاقے سے شرورہ میں داخل ہوئے تھے اور سکیورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپ میں ان میں سے چار جنگجو زخمی ہو گئے ہیں۔

بیان میں مزید بتایا گیا ہے کہ حملہ آور سعودی جنگجوؤں کو ماضی میں بھی ایک منحرف گروپ سے تعلق کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔ وہ اس سے قبل دہشت گردی کے الزامات میں جیل میں قید رہے تھے اور انھیں حال ہی میں جیل سے رہا کیا گیا تھا۔ ان حملہ آوروں کے نام یہ ہیں:

۱:نہض خالد عائض آل عتیبی

۲:محمد فراج سلمان عنزی

۳:خلیل حسن یحییٰ الزہرانی

۴:بندر دیج حربی

۵:عبداللہ سعد محمد

۶:محمد سالم عواد سیاری

۷:فہد محمد حمود البکری

۸:علی عبداللہ صالح

۹:عیسیٰ عواد غازی آل عتیبی

۱۰:خالد فیصل عتیبی

واضح رہےکہ ماضی میں بھی سعودی عرب کے بارڈر گارڈز کی اسمگلروں اور جنگجوؤں سے یمن کے ساتھ واقع سرحدی علاقے میں متعدد مرتبہ جھڑپیں ہو چکی ہیں۔