.

رومانوی منظر کے ذریعے اوباما کا دوسری مرتبہ صدارتی کامیابی کا اعلان

اوباما نے 303 جبکہ رومنی نے 206 الیکٹرول ووٹ لئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
امریکا میں جاری صدارتی انتخابات میں ووٹوں کی گنتی کا عمل مکمل ہو گیا ہے اور نتائج کے مطابق ڈیموکریٹ کے سیاہ فام امیدوار براک حسین اوباما دوسری مرتبہ چار برس کے لئے امریکا کے صدر بن گئے ہیں۔

اوباما کا رپبلکن پارٹی کے اُمیدوار مٹ رومنی سے سخت مقابلہ رہا۔ براک اوباما کو جیت کے لیے 538 میں سے 270 الیکٹرول ووٹ درکار تھے۔ براک حسین اوباما نے فتح کے لیے درکار دو سو ستر الیکٹرول ووٹس میں تین سو تین ووٹ حاصل کئے جبکہ ان کے مد مقابل ری پبلکن امیدوار مٹ رومنی نے دو سو چھے ووٹ لیے۔

یاد رہے کہ اس سے قبل صرف بل کلنٹن ہی ایسے ڈیموکریٹ رہنما تھے کہ جو دوسری جنگ عظیم کے بعد دو مرتبہ صدارتی انتخاب جیتنے میں کامیاب ہوئے ۔

امریکی انتخابات کے لیے ووٹنگ کا آغاز ریاست نیو ہیمپشائر سے ہوا، جہاں کے نتائج کے مطابق اوباما فاتح قرار پائے۔ ریاست کینٹکی اور انڈیانا میں رومنی کا پلڑا بھاری رہا۔

ان دونوں ریاستوں میں رومنی کو بالترتیب چھپن اور ستاون فیصد جبکہ اوباما کو بیالیس اور اکتالیس فیصد ووٹ حاصل ہوئے جبکہ ریاست ورمونٹ اور ساؤتھ کیرولینا کے غیر سرکاری نتائج میں اوباما کامیاب رہے۔