.

افغانستان تین بم دھماکوں میں 8 سکیورٹی اہلکاروں سمیت 18 ہلاک

کسی گروپ نے بم حملوں کی ذمے داری قبول نہیں کی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
افغانستان کے جنوبی اور مشرقی علاقوں میں بم دھماکوں میں دس شہریوں سمیت اٹھارہ افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے ہیں۔

افغانستان کے جنوبی صوبہ ہلمند کے پولیس سربراہ کے ترجمان فرید احمد فرہنگ نے بتایا ہے کہ ضلع موسیٰ قلعہ میں سڑک کے کنارے نصب بم کے دھماکے کے نتیجے میں دس افراد ہلاک ہو گئے۔ مہلوکین ایک گاڑی میں سوار تھے اور وہ شادی کی ایک تقریب میں شرکت کے لیے جا رہے تھے۔

مشرقی صوبہ لغمان کے علاقے بدپاکھ میں سڑک کنارے نصب ایک اور بم کا دھماکا ہوا جس کے نتیجے میں پانج افغان فوجی ہلاک ہو گئے ہیں۔ تیسرا خودکش بم حملہ قندھار شہر میں ہوا ہے جہاں ایک موٹر سائیکل پر سوار بمبار نے ایک پولیس اسٹیشن کے باہر خود کو دھماکے سے اڑا دیا۔ اس حملے میں تین پولیس اہلکار ہلاک اور چار زخمی ہوئے ہیں۔ فوری طور پر کسی گروپ نے اس بم حملے کی ذمے داری قبول نہیں کی۔