.

صدر مرسی نے ملک میں شریعت کے نفاذ بارے ہم سے دھوکہ کیا

حالات سازگار ہونے تک صبر کی تلقین کی جا رہی ہے: شیخ یعقوب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مصر کے ایک جید عالم دین الشیخ محمد حسین یعقوب نے کہا ہے کہ صدر محمد مرسی نے اپنے انتخاب سے قبل ما بعد انتخاب ان سے ملک میں شریعت کے نفاذ کا وعدہ کیا تھا لیکن ابھی تک وہ اپنا وعدہ ایفاء نہیں کر سکے۔ ان کا کہنا ہے ہمیں توقع تھی کہ ملک میں اسلامی سربراہ کے انتخاب کے بعد اسلامی شریعت کا جلد نفاذ ہو گا تاہم ہماری توقعات پوری نہیں ہوئیں۔



شیخ محمد حسین یعقوب نے مصری ٹی وی 'الناس' کے ایک ٹاک شو میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ صدر محمد مرسی ان سے کیے گئے وعدوں سے پھسل گئے۔ انہوں نے ملک میں شریعت کے نفاذ کے بجائے وقت گذاری کی پالیسی اپنائی اور ہمیں ملک میں نئے آئین کی تشکیل اور سیاسی اور سماجی حالات کے سازگار ہونے تک صبر کی تلقین کرتے رہے ہیں۔



انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ نئے دستور کی تدوین کے دوران پرانے آئین کی اس دفعہ کو نہ چھیڑا جائے جس میں دستور سازی میں قرآن وسنت کو بنیادی ماخذ تسلیم کیا گیا ہے۔