.

شاہ عبداللہ عرب دنیا کی طاقتور ترین اور دنیا کی ساتویں مؤثر شخصیت

سعودی فرمانروا کے قائدانہ کردار اعتراف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
امریکی بزنس جریدے 'فوربز' کی دنیا کی طاقتور شخصیات سے متعلق رپورٹ میں سعودی بادشاہ عبداللہ بن عبدالعزیز کو عرب دنیا کی پہلی طاقتور اور دنیا بھر کی ساتویں مؤثر شخصیت قرار دیا ہے۔ امریکی جریدے کی رپورٹ میں سنہ 2012ء کی مجموعی طور پر 71 با اثر شخصیات کا تعارف پیش کیا گا تھا ان میں سعودی فرمانروا تمام عرب ملکوں میں پہلے اور دنیا میں ساتویں طاقتور لیڈر قرار پائے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق شاہ عبداللہ کو طاقتور شخصیت کی حیثیت سے انتخاب کئی حوالوں سے کیا گیا۔ وہ ایک ایسے ملک کے سربراہ ہیں جو دنیا بھر کے تیل کے 20 فیصد ذخائر کا مالک ہے۔ عالم اسلام میں سعودی عرب اور اس کے بادشاہ کا بہت احترام ہے۔ عالم اسلام سعودی حکومت کو مقامات مقدسہ کے پاسبان کے طور پر دیکھتے اور ان کی عزت کرتے ہیں۔ اس کے علاوہ رواں سال مختلف عرب ملکوں میں جاری انقلاب کی تحریکوں کے دوران شاہ عبداللہ نے ان تحریکوں کے اپنے ملک پر کسی قسم کے منفی اثرات مرتب نہیں ہونے دیے اور حالات کی خرابی کے باوجود ملک کو مستحکم کیا۔

خیال رہے کہ فوربز میگزین ہر سال دنیا کی مختلف شعبوں میں مؤثر شخصیات کے بارے میں ایک رپورٹ شائع کرتا ہے۔ رپورٹ میں سربراہان مملکت، دولت مند شخصیات، شو بز کے شعبے سے وابستہ فلمی ہیروز ، نامور تاجروں اور طاقتور خواتین کے بارے میں رپورٹس شائع کی جاتی ہیں۔ ان رپورٹس کی تیاری میں سال بھر میں مختلف پہلوؤں سے عوامی سروے جاری رہتے ہیں۔ سیاست دانوں اور سربراہان مملکت کے بارے میں رائے عامہ کے جائزوں میں ان کے عالمی کردارپر بحث کی جاتی ہے۔ اس سال کی طاقتور ترین شخصیات میں امریکی صدر براک اوباما، جرمن چانسلر انجیلا مرکل، روس کے ولادی میر پوتن، امریکی مائیکرو سافٹ کمپنی کے مالک بل گیٹس اور دیگر شامل ہیں۔