.

العربیہ پانچ سالوں میں تیسری مرتبہ بہترین کوریج ایوارڈ کا حقدار

برطانوی نشریاتی ادارہ دوسرے نمبر پر رہا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
دبئی سے عربی زبان میں نشریات پیش کرنے والے العربیہ نیوز چینل کو اقوام متحدہ اور بین الاقوامی امور کی بہترین کوریج پر 2012 کے ایوارڈ کا حقدار قرار دیا گیا ہے۔ العربیہ کو یہ ایوارڈ شامی بحران کی کوریج پر دیا گیا اور ادارے کو گزشتہ پانچ برسوں میں ملنے والا یہ تیسرا ایوارڈ ہے۔

العربیہ کے نیویارک بیورو چیف طلال الحاج نے کہا "کہ شام میں نہتے شہریوں کے ساتھ جو کچھ ہو رہا ہے میں اسے دیکھتے ہوئے دس ہزار ڈالر مالیت کا بہترین کوریج ایوارڈ شامی مہاجرین کے ہائی کمشنر کے فنڈ میں جمع کرانے کا اعلان کرتا ہوں۔ مجھے امید ہے کہ میرا یہ معمولی انسان دوست اقدام دوسروں کو بھی شامی بہن، بھائیوں کی مدد پر آمادہ کرے گا۔ میں ایوارڈ میں ملنے والا گولڈ میڈل شامی خواتین اور بچوں کو ہدیہ کرتا ہوں۔"

یو این جرنلسٹ ایسوسی ایشن کے صدر جان پاولو پیولی نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہ امسال ایوارڈ کے لئے مقابلہ انتہائی سخت تھا کیونکہ 250 بین الاقوامی صحافیوں نے انٹریز بھجوائی تھیں۔ ایسے سخت مقابلے کے بعد ایوارڈ جیتنے والی شخصیت کا انعامی رقم اور میڈل کو شامی مہاجرین کے نام کرنا نہایت مثبت بات ہے۔ یہ فیصلہ آزادی صحافت اور خود صحافی کی خودمختاری کا غماز ہے۔

یاد رہے مقابلے میں برطانوی نشریاتی ادارہ BBC دوسرے اور ارجنٹائن کا نیوز چینل 10 تیسرے نمبر پر آیا۔ یو این میں العربیہ کا تیسری مرتبہ گولڈ میڈل جیتنا یو این کی تاریخ میں ایک ریکارڈ ہے کیونکہ اس سے قبل کسی صحافی یا صحافتی ادارے نے تین مرتبہ بہترین کوریج ایوارڈ حاصل نہیں کیا۔