.

صدر مرسی اور اخوان اللہ کا خوف کریں البرادعی

عوام سے ریفرینڈم میں نیا دستور نامنظور کرنے کی اپیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
شکست خوردہ صدارتی امیدوار اور الدستور پارٹی کے صدر محمد البرادعی نے صدر محمد مرسی اور ان کی جماعت اخوان المسلمون سے اپیل کی ہے کہ وہ اللہ کا خوف کریں۔ ملک میں تمام سیاسی جماعتوں کی نمائندہ دستور ساز اسمبلی کی تشکیل تک صدر مرسی 1971ء کے ترمیمی دستور سے کام چلائیں۔

اپنے ریکارڈ شدہ ویڈیو پیغام میں ڈاکٹر البرادعی نے کہا: "اس دستور کا شریعت اور مذہب سے کوئی تعلق نہیں۔ مسلمان یا عیسائی سبھی کو دین کا علم ہے۔ انہوں نے مصریوں پر زور دیا کہ وہ نئے دستور کے حوالے سے 22 دسمبر کے ریفرینڈم میں اپنا ووٹ 'ناں' کی صورت استعمال کریں۔

یاد رہے کہ محمد البرادعی اس سے قبل ملک کو درپیش سخت بحرانی کیفیت سے نکلنے کے لئے 'ملکی بدنامی' کے باعث ریفرینڈم کی منسوخی پر زور دیتے ہوئے سیاسی جماعتوں سے مذاکرات کا مطالبہ کرتے چلے آئے ہیں۔

انہوں نے قانون کی بحالی اور ملکی انتظام و انصرام چلانے کی اہل حکومت کو زمام سوپنے پر زور دیا۔ البرادعی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے ذاتی اکاؤنٹ میں پیغام تحریر کیا ہے کہ: آخری موقع ۔۔ بدنام زمانہ ریفرینڈم منسوخ کر کے اختلاف ختم کرنے کے لئے مذاکرات کئے جائیں۔ انتظامی امور انجام دہی کی اہل حکومت ہی قانون کی حکمرانی یقینی بنا سکتی ہے۔"

محمد البرادعی مصر میں صدر مرسی کے ریفرینڈم کے خلاف بننے والے نیشنل سالویشن فرنٹ کے رہنما ہیں اور موجودہ حکومت کی دو ہفتے قبل مذاکرات کی پیشکش ٹھکرا چکے ہیں۔