.

یمن امریکی ڈرون حملے میں القاعدہ کے دو جنگجو ہلاک

امریکا کے بغیر پائیلٹ جاسوس طیاروں کے حملوں میں تیزی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
یمن کے جنوبی علاقے میں القاعدہ سے وابستہ ایک جنگجو تنظیم کے مشتبہ ٹھکانے پر امریکا کے بغیر پائیلٹ جاسوس طیارے کے میزائل حملے میں دو جنگجو ہلاک ہو گئے ہیں۔

یمنی حکام کے مطابق امریکی ڈرون نے جنوبی صوبے البائدہ میں واقع ایک قصبے میں ایک گاڑی کونشانہ بنایا ہے اور اس پر میزائل داغا ہے۔حملے میں دو مشتبہ جنگجو ہلاک ہو گئے ہیں۔ ایک مقامی اہلکار نے بتایا کہ مارے گئے دونوں افراد میں ایک اردنی شہری تھا۔

واضح رہے کہ امریکا نے یمن میں القاعدہ سے وابستہ تنظیم کے جنگجوؤں کے خلاف ڈرون حملے تیز کررکھے ہیں۔ وہ اور سعودی عرب یمن میں استحکام کو اپنی ترجیح قرار دیتے ہیں کیونکہ ایک تو وہ سعودی عرب کا ہمسایہ ملک ہے اور اس کے قریب سے تزویراتی اہمیت کی حامل تیل کی پائپ لائنیں گزرتی ہیں اور دوسرا یمن میں سرکاری سکیورٹی فورسز کے خلاف بر سر پیکار القاعدہ کو سب سے خطرناک سمجھا جاتا ہے۔

القاعدہ سے وابستہ تنظیم جزیرہ نما عرب میں القاعدہ نے گذشتہ سال کے اوائل میں یمن میں سابق صدر علی عبداللہ صالح کے خلاف احتجاجی مظاہروں کے دوران ملک کے جنوبی صوبوں کے ایک بڑے علاقے پر قبضہ کر لیا تھا۔ تاہم یمنی سکیورٹی فورسز نے بعد میں اس تنظیم کے جنگجوؤں کو وہاں سے نکال باہر کیا تھا اور اس سے زیر قبضہ علاقے واپس لے لیے تھے لیکن اس تنظیم سے وابستہ جنگجوؤں کا مکمل طور پر خاتمہ نہیں کیا جا سکا تھا اور وہ تب سے گاہے گاہے اپنی کمین گاہوں سے نکل کر سکیورٹی فورسز کے اہلکاروں پر حملے کرتے رہتے ہیں۔