.

کابل میں سرحدی پولیس کمپلیکس میں خودکش دھماکا

طالبان نے دھماکے کی ذمہ داری قبول کر لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
افغانستان کے دارلحکومت کابل میں پارلیمنٹ روڈ پر بارڈر پولیس کمپلیکس پر خودکش حملہ کیا گیا ہے۔ ایک مقامی پولیس افسر نے اے ایف پی کو بتایا کہ پہلے ایک بڑا دھماکا ہوا جو ایک خودکش کار دھماکا تھا اور اس کے بعد مزید دھماکے اور فائرنگ بھی ہوئی۔

کابل کے سی آئی ڈی چیف محمد ظاہر کا کہنا تھا کہ دو، تین یا چار افراد پر مشتمل ایک دہشت گردوں کے گروپ نے ٹریفک پولیس کی بلڈنگ میں داخل ہونے کی کوشش کی۔

ایک عینی شاہد کا کہنا تھا کہ دو بمباروں نے کو داخلی دروازے پر ہی ہلاک کر دیا گیا جبکہ ایک شخص شاید بلڈنگ میں داخل ہوگیا تھا اور فائرنگ کر رہا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ علاقے میں سیکیورٹی فورسز موجود ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ پہلا دھماکا بہت زوردار اور اس کے بعد مزید دھماکے اور فائرنگ ہوئی۔ انہوں نے بتایا کہ جائے وقوعہ پرآگ بجھانے والے ٹرک، ایمبیولنس اور پولیس موجود ہے۔

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے ایک ایس ایم ایس پیغام میں اے ایف پی کو بتایا کہ شورش پسند اس حملے کے پیچھے تھے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق دھماکا شدید نوعیت کا ہے اور اس کی آواز دور دور تک سُنی گئی ہے۔ دھماکے کے نتیجے میں متعدد ہلاکتوں کا خدشہ ہے۔