.

مالی: فرانسیسی فوجیوں کا کیدال کے ہوائی اڈے پر قبضہ

باغیوں کے آخری مضبوط گڑھ پر قبضے کے لیے پیش قدمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانسیسی فوجیوں نے بدھ کو مالی کے شمالی شہر کیدال کے ہوائی اڈے کا کنٹرول سنبھال لیا ہے اور وہ باغیوں کے آخری مضبوط گڑھ پر قبضے کے لیے پیش قدمی کر رہے ہیں۔

فرانسیسی فوج کے ترجمان تھیری برخارڈ اور ایک مقامی عہدے دار نے کیدال کے ہوائی اڈے پر کنٹرول کی اطلاع دی ہے اور کہا ہے کہ فرانسیسی فوجی کیدال میں موجود ہیں اور وہاں باغیوں کے خلاف کارروائی جاری ہے۔ فرانسیسی فوج کے ترجمان نے مزید تفصیل بتانے سے گریز کیا ہے۔

اگر فرانسیسی فوجیوں کا اس شہر پر بھی قبضہ ہوجاتا ہے تو القاعدہ سے وابستہ جنگجو مالی کے شمالی علاقے میں اپنے آخری مضبوط گڑھ کو بھی محروم ہو جائیں گے۔ اسی ہفتے فرانسیسی فوجیوں نے مالی کے دو بڑے شمالی شہروں گئیو اور ٹمبکٹو پر قبضہ کر لیا تھا۔

کیدال اسی نام کے صحرائی علاقے کا دارالحکومت ہے۔ اس شہر پر فرانسیسی فوج گذشتہ تین ہفتوں سے فضائی حملے کر رہی ہے جبکہ بر سرزمین موجود سیکڑوں فرانسیسی فوجی باغیوں کے زیر قبضہ علاقوں اور ٹھکانوں کی جانب پیش قدمی کر رہے ہیں۔

طورق باغیوں کی جماعت ایم این ایل اے نے اسی ہفتے کہا تھا کہ انھوں نے اسلامی جنگجوؤں کی پسپائی کے بعد کیدال کا کنٹرول سنبھال لیا تھا۔ طورق باغی مالی کے شمالی علاقے میں زیادہ خود مختاری کے حصول کے لیے ایک عرصے سے مسلح جدوجہد کر رہے ہیں۔ انھوں نے گذشتہ سال کے اوائل میں مالی کی سرکاری فوج کے خلاف اسلامی جنگجوؤں کے ساتھ مل کر علم بغاوت بلند کیا تھا لیکن 2012ء کے وسط میں مسلم جنگجوؤں نے طورق باغیوں کو منظر عام سے ہٹا دیا تھا اور تمام معاملات اپنے کنٹرول میں لے لیے تھے۔