.

القاعدہ اسیران کی رہائی کے لئے سعودیہ میں مسلح کارروائیوں کا پرچار

یو ٹیوب سے ویڈیو پیغام ہٹا دیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

القاعدہ کے رہنما ابراھیم الربیش نے سعودی عرب میں اپنے نیٹ ورک سے وابستہ لوگوں کی رہائی کی خاطر ہتھیار اٹھانے کی ہدایت کی ہے۔ اس موقف کا اظہار انہوں نے 'یو ٹیوب' پر پوسٹ ایک ویڈیو اپیل میں کیا ہے۔ انہوں نے سعودی عرب میں القاعدہ کے رہائی پانے والے ارکان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ لوگ دوسرے ساتھیوں کی رہائی لئے مسلح کارروائی کریں۔

اپنی ویڈیو میں انہوں نے زیر حراست القاعدہ ارکان سے کہا کہ آپ لوگوں کا کام جیل سے رہائی کے بعد ختم نہیں ہو گا بلکہ تو اس بات کی طرف اشارہ ہو گا کہ آپ کا وہ مشن ادھورا ہے جس کی خاطر آپ نے قید و بند کی صعوبتیں برداشت کیں۔ آپ پر لازم ہے کہ اس کاز کا دفاع کریں اور اس کی کامیابی کے لئے جدوجہد کریں۔

انہوں نے القاعدہ اسیران سے کہا کہ وہ عوامی ہمدردی کو اپنے حق میں استعمال کریں۔ انہیں اپنا ہمخیال بنائیں۔ ادھر یو ٹیوب نے ابراھیم الربیش کی ویڈیو اپنی سائٹ سے ہٹا دی ہے۔ ویڈیو تلاش کرنے والوں کے لئے یو ٹیوب پر ایک پیغام پوسٹ کر دیا گیا ہے کہ ویڈیو کے مندرجات ویب سائٹ کی پالیسی سے ہم آہنگ نہ تھے، اس لئے ویڈیو ہٹا دی گئی ہے۔

یاد رہے کہ سعودی عرب میں ان دونوں دہشت گردی کے مختلف الزامات کی پاداش میں زیر حراست اسیران کے لئے ایک اصلاحی پروگرام شروع کیا گیا ہے، جس میں انہیں نامور علماء دہشت گردی سے تائب ہونے کے لئے لیکچر دیتے ہیں۔ متعدد عادی مجرم اور القاعدہ ارکان اس پروگرام سے استفادہ کر کے معاشرے کے فعال رکن کے طور پر زندگی گذار رہے ہیں۔