مائیکل جیکسن کے بیٹے کے مبینہ کویتی شہزادی سے معاشقے کی تردید

امریکی اور برطانوی میڈیا نے عام کویتی لڑکی کو شہزادی بنا دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

پاپ میوزک کی دنیا کے بادشاہ آنجہانی مائیکل جیکسن کے بیٹے پرنس کا کویت کی ایک شہزادی کے ساتھ مبینہ معاشقے کی تردید سامنے آ گئی ہے اور ذرائع نے اس حوالے سے تمام رپورٹس کو بے بنیاد قرار دیا ہے۔

تفریحی اور چلبلی خبریں شائع کرنے والی نیوز سائٹس اور ٹیبلائیڈ اخبارات نے اسی ہفتے یہ رپورٹس شائع کی تھیں کہ مائیکل جیکسن کا سولہ سالہ بیٹا پرنس ایک کویتی لڑکی کے ساتھ وقت گزاری کررہا ہے۔اس کویتی لڑکی کے بارے میں کہا گیا تھا کہ وہ شہزادی ہے اور اس کا نام ریمی آل فلاح ہے۔

العربیہ کو اپنے ذرائع سے ملنے والی معلومات کے مطابق ریمی کے بارے میں پہلی حقیقت تو یہ ہے کہ وہ شاہی خاندان سے کوئی تعلق نہیں رکھتی۔ایک کویتی صحافی نے اپنی شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر العربیہ کو بتایا کہ آل فلاح شاہی خاندان کا کوئی نام نہیں ہے۔کویت میں وہ ایک مشہور خاندانی نام ہے۔اس لیے ریمی آل فلاح ہرگز بھی کویتی شہزادی نہیں ہے۔

اسی ہفتے ٹی ایم زیڈ انٹرٹینمنٹ سائٹ نے پرنس اور ریمی کی تصاویر پوسٹ کی تھیں اور یہ بتایا تھا کہ یہ تصاویر گذشتہ بدھ کو لاس اینجلیس میں بنائی گئی تھیں۔ان دونوں کے بارے میں یہ بھی بتایا گیا تھا کہ وہ ایک ہی نجی اسکول میں پڑھتے ہیں۔

اس حوالے سے امریکا میں کویتی قونصل خانے کا حوالہ دیا گیا تھا لیکن مذکورہ کویتی صحافی کا کہنا تھا کہ ''یہ کہا جاتا ہے کہ وہ دونوں اکٹھے اسکول جاتے ہیں۔یہ تو ہے مگر اس سے زیادہ اس کی کوئی اہمیت نہیں۔باقی سب پروپیگنڈا ہے''۔

اسی ہفتے امریکی اور برطانوی پریس میں ریمی کے کویتی شہزادی ہونے سے متعلق اطلاعات سامنے آتی رہی ہیں۔کویتی اخبارات میں بھی یہ خبریں شائع ہوئی ہیں لیکن ان میں ریمی کو ایک عام کویتی لڑکی قرار دیا گیا ہے،شہزادی نہیں۔

درایں اثناء کویت کے ایک اخبار الرائے نے ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ ریمی کا حقیقی نام ''مریم'' ہے۔ریمی اس کا عرفی نام ہے۔اس کی والدہ امریکی ہے۔اخبار کے مطابق کویتی حکام نے اس کے شاہی خاندان سے تعلق کے حوالے سے تمام الزامات کی تردید کی ہے۔

لیکن یہ پہلا موقع نہیں کہ جیکسن خاندان کے ارکان کے عرب دنیا کے ساتھ تعلقات کی خبریں اخبارات اور نیوز سائٹس کی زینت بنی ہیں۔اسی سال کے اوائل میں مائیکل جیکسن کی بہن جینیٹ جیکسن اور قطر کی کاروباری شخصیت وسام المنا نے اعلان کیا تھا کہ انھوں نے خاموشی سے ایک نجی مگر خوبصورت تقریب میں شادی کر لی ہے۔جینیٹ ان افواہوں کی تردید میں لگی ہوئی تھیں کہ ان کی شادی دوکروڑ ڈالرز مالیت کے معاشقے کا نتیجہ ہے۔

مرحوم مائیکل جیکسن نے بھی عرب دنیا میں بڑا وقت گزارا تھا اور وہ بحرین میں کئی ماہ تک مقیم رہے تھے۔ ان کے بارے میں یہ خبریں بھی منظرعام پر آئی تھیں کہ انھوں نے اپنے انتقل سے کچھ عرصہ قبل اپنے بھائی جرمین کے نقش قدم پر چلتے ہوئے خلیجی ریاست بحرین کے دورے کے بعد اسلام قبول کرلیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں