میدان عرفات میں 60 ہزار فائر پروف مستقل خیمے لگانے کی ہدایت

ماحول دوست منصوبے پر دو ارب سعودی ریال لاگت آئے گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے میدان عرفات میں آگ سے محفوظ رہنے والے 60 ہزار مستقل خیموں کا انتظام کیا جائے گا۔ اس سلسلے میں سپریم حج کمیٹی کے سربراہ اور مملکت کے وزیر داخلہ شہزادہ محمد بن نایف نے میونسپل کمیٹی کو منصوبے کی نگرانی کرنے کی ہدایت کر دی ہے جو مجوزہ پلان کے نمایاں خدوخال اور اس پر اٹھنے والے اخراجات کا تخیمنہ لگائے گی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ نے اپنی ایک رپورٹ میں بلدیہ میں ترقیاتی مںصوبہ جات کے سیکرٹری ڈاکٹر حبیب بن مصطفی زین العابدین کے حوالے سے بتایا کہ وزیر مسئول نے میدان عرفات میں مستقل خیموں کے بارے دس روز قبل تجویز پیش کی تھی، جس کے موصول ہوتے ہی اس پر کام شروع کر دیا گیا۔

انہوں نے بتایا کہ منصوبے کی تکمیل سے حاجیوں کو عرفات میں زیادہ سے زیادہ جگہ میسر آئے گی۔ اس پراجیکٹ کی تکمیل کے بعد عرفات کے میدان میں کاٹن کے خیموں کا استعمال ترک کر دیا جائے گا کیونکہ یہ آتشزدگی کا باعث بنتے ہیں۔ نیز مستقل خیمہ بستی میں اللہ کے مہمانوں کو مناسب معیار کی اعلی شان خدمات کی فراہمی بھی یقینی ہو گی۔

ادھر باخبر ذرائع نے اس منصوبے پر اٹھنے والے اخراجات کا تخمینہ ایک ارب سعودی ریال لگایا ہے۔ زید العابدین کے بہ قول اس دیو ہیکل منصوبے کو تین برس میں مرحلہ وار مکمل کیا جائے گا۔ ہر مرحلے کی تکمیل پر تیار ہونے والے خیموں کو حجاج استعمال کر سکیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں