صدر مرسی سے مذاکرات کے لئے محمد البرادعی کی تین شرائط

"مصر کے حالات ہم سب میں کسی کے حق میں موافق نہیں ہیں"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مصر کے سرکردہ سیاسی رہنما اور الدستور پارٹی کے سربراہ ڈاکٹر محمد البرادعی نے صدر محمد مرسی کا بائیکاٹ ختم کرنے کی غرض سے تین شرائط پیش کی ہیں۔ انہوں نے قومی اتفاق رائے سے کام کرنے کا عندیہ بھی ظاہر کیا ہے۔

پیپلز پارٹی کے زیر اہتمام منعقد ہونے والی اقتصادی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے محمد البرادعی نے کہا کہ اگر محمد مرسی ہماری تین شرائط مان لیں تو ان سے مذاکرات کئے جا سکتے ہیں۔ ان شرائط میں قانونی جواز رکھنے والی غیر جانبدار حکومت جس کی سربراہی وزیراعظم کریں قائم کی جائے۔ نیز ملک میں غیر متنازعہ اٹارنی جنرل مقرر کیا جائے۔ اس کے علاوہ ایک کمیٹی تشکیل دی جائے جو ملک میں صاف شفاف انتخاب کو یقینی بنانے کے لئے متعلقہ قانون پر نظرثانی کرے۔

محمد البرداعی کے مطابق مذاکرات کی میز سجانے کا بنیادی مقصد 'غیر انسانی' دستور میں ترمیم اور کریمنل جسٹس کی خاطر قومی مصالحتی کمیٹی کی تشکیل ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ صدر مرسی کو جان لینا چاہئے کہ وقت ان کی حق میں نہیں ہے اور نہ ہی یہ مصر کے موافق حالات ہیں۔ موجود حالات ہم سب کے لئے مفید نہیں، ہمیں سنجیدگی اور تیزی کے ساتھ کام کرنا ہو گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں