"سعودی عرب سے جاری 70 ہزار سمز ایران میں چل رہی ہیں"

دس ملین غیر ملکیوں کو 'فری رومنگ' سروس سے فائدہ ہو رہا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کی مواصلاتی کمپنی اتصالات کی 70 ہزار سمز اس وقت ایران میں ایکٹو ہیں۔ اس امر کا انکشاف سعودی عرب کی مجلس شوری کے رکن سعود الشمری نے اخبار 'الوطن' سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ہے۔

اخبار کے مطابق سعود الشمری نے تجویز دی ہے کہ اپنے شہریوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لئے ضروری ہے کہ سعودی عرب اتصالات کے نیٹ ورک پر دوران رومنگ مفت کال سننے کی سہولت ختم کر دے کیونکہ مملکت کی جغرافیائی حدود سے باہر استعمال ہونے والی سمز کو آزادانہ طور پر ٹریک نہیں کیا جا سکتا اور امکانی طور پر انہیں کسی مجرمانہ سرگرمی کے لئے بھی استعمال کیا جا سکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بعض بین الاقوامی معاہدے حکومتوں کو اس بات کا پابند بناتے ہیں کہ کسی جرم کی صورت میں ذاتی کالز کا ریکارڈ فراہم کیا جائے لیکن دنیا بھر میں کوئی بھی مواصلاتی کمپنی یہ کام مفت نہیں کرتی۔

ادھر ایک اور عرب روزنامے 'الحیاہ' نے اپنی حالیہ اشاعت میں انکشاف کیا ہے کہ سعودی مواصلاتی کمپنیوں کی جاری کردہ بیس لاکھ سمز مصر اور ستر ہزار ایران میں استعمال کی جا رہی ہیں۔

سعود الشمری نے گزشتہ روز مجلس شوری کے اجلاس میں ہونے والی بحث میں سوال اٹھایا کہ سعودی عرب کی مواصلاتی کمپنیوں نے فری رومنگ کی جو سہولت فراہم کر رکھی ہے، اس کا خسارہ وہ اندرون ملک کالز کے بھاری نرخ مقرر کر کے پورا کر رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بعض سمز مستقل طور پر بیرون ملک استعمال ہو رہی ہیں، جس سے سعودی معشیت کو نقصان پہنچ رہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس سہولت سے بیرون ملک دس لاکھ سعودی فائدہ اٹھاتے ہیں جبکہ اسی سہولت سے دس ملین غیر ملکی فائدہ اٹھا رہے ہیں۔ انہوں نے مواصلاتی کمپنیوں پر زور دیا کہ وہ ایسے پیکج متعارف کرائیں کہ جن کا بوجھ صرف اندرون ملک سعودیوں پر نہ ڈالا جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں