.

ڈرائیور میں بھیئریئے کی روح کا حلول، مسافروں کے سامنے خودکشی

ٓسٹریلوی جزیرے میں ٹیکسی کے اندر خفیہ کیمرے میں دل دہلا دینے والا محفوظ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

آسٹریلیا کے جزیرے ٹسمانیہ کے چھوٹے سے قصبے ہوبارٹ میں گزشتہ شب سب کچھ معمول کے مطابق تھا۔ ایک ٹیکسی ڈرائیور سواریوں کی تلاش میں جا رہا تھا کہ اسے راستے میں ایک لڑکی اور اس کی سہیلی نے روکا۔ دونوں شہر میں اپنی سہیلیوں کے پاس مقیم تھیں۔ ہوبارٹ کی میونسپل کمیٹی کے مطابق سیاحوں کی جنت میں چلنے والی ٹیکسی گاڑیوں میں تین کیمرے لگانا ضروری ہے، جو ٹیکسی کے ڈرائیور اور سواروں کی تصاویر براہ راست پولیس اسٹیشن کو ارسال کرتے ہیں۔

نصف شب کے وقت چاند پوری آب و تاب سے چمک رہا تھا کہ عین اسی لمحے ٹیکسی ڈرائیور میں کسی بھیڑئیے کی روح حلول کر آئی۔ اس وقت وہ ایک اجاڑ سڑک پر گاڑی چلا رہا تھا۔ ٹیکسی میں موجود سواریوں نے ڈرائیور کے دانت پیسنے کی آواز صاف طور پر سنی، پھر بھیڑیئے کی طرح غراتے ہوئے دیکھ کر ٹیکسی میں سفر کرنے والی لڑکیوں کی سٹی گم ہو گئی۔ پھر ڈرائیور نے چیخ پکار شروع کر دی اور اپنے سر کے بال نوچنے لگا۔

ٹیکسی ڈرائیور کے جسمانی خلیوں میں بھیڑیئے کی صفات عود کر آئیں اور اسی لمحے اس نے اپنا پسٹل نکال کر سواریوں کو لہرا کر دکھایا جن کا گاڑی میں خوف کے مارے چیخ چیخ کر برا حال تھا اور ان کا اس وہم کے مارے دم نکلا جا رہا تھا کہ ڈرائیور انہیں موت کے گھاٹ اتار کر خودکشی کر لے گا۔

پولیس اسٹیشن میں براہ راست گاڑی کے اندر دیکھے جانے والے خوفناک منظر کے مطابق ایک گولی ڈرائیور کو فنا کے گھاٹ اتارنے کے لئے ناکافی تھی۔ ڈرائیور گاڑی سے اترا اور اس نے کار کے گرد چکر لگایا پھر مسافر دروازہ کھولا جس سے دونوں دوست انتہائی خوفزدہ ہو گئیں اور عین اسی لمحے ڈرائیور کی شکل مکمل طور پر بھیڑیئے جیسی بن گئی۔ ایسا منظر ہوبارٹ یا چشم فلک نے پہلے صرف فلموں یا ٹی وی چینلز کے خفیہ کیمروں کے ذریعے فلمائے جانے والے پروگراموں میں دیکھا ہو گا، پا بھر یہ منظر اس نیوز رپورٹ میں بطور ویڈیو اٹیج ہے۔