.

اسرائیل کو ایران پر حملے کے فیصلے کا حق حاصل ہے:چک ہیگل

امریکا،اسرائیل اسلحہ معاہدے سے ایران کو واضح پیغام گیا ہے:صحافیوں سے گفتگو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزیردفاع چک ہیگل نے کہا ہے کہ امریکا کے اسرائیل کے ساتھ اسلحے کی فروخت کے نئے معاہدے سے ایران کو ایک واضح پیغام گیا ہے اور اسرائیل کو اپنے طورپر ایران پر حملے کے فیصلے کا حق حاصل ہے۔

چک ہیگل نے یہ بات اسرائیل کے دورے کے لیے آتے ہوئے اپنے ساتھ طیارے پر محوسفر صحافیوں سے گفتگو میں کہی ہے۔ وہ اتوار کی صبح اسرائیل پہنچ گئے ہیں۔ امریکی اخبار وال اسٹریٹ جرنل کی رپورٹ کے مطابق وزیردفاع نے کہا کہ ''اسرائیل ایک خودمختار ریاست ہے اور ہر خودمختار قوم کو اپنے دفاع اور تحفظ کا حق حاصل ہے۔اسرائیل بھی ایسا کرے گا اور اس کو ایسا کرنا چاہیے''۔

انھوں نے کہا کہ اسرائیل کو جدید ہتھیار مہیا کیے جائیں گے جس سے اس کی ایران پر حملے کی صلاحیتوں میں اضافہ ہوگا۔انھوں نے کہا کہ اسرائیل کے ساتھ اسلحے کی ڈیل سے ایران کو بہت واضح اشارہ جاتا ہے کہ جوہری بم کے حصول سے باز رکھنے کے لیے اس کے خلاف فوجی کارروائی ایک آپشن کے طور پربدستور موجود ہے۔

امریکی وزیردفاع اپنے اسرائیلی ہم منصب موشے یاعلون سے بات چیت میں اسلحے کی فروخت کے معاہدے کو حتمی شکل دیں گے۔اس کے تحت امریکا اسرائیل کو وی 22 آسپرے طیارے، دوبارہ ایندھن بھرائی والے ٹینکر ، جنگی طیاروں کے لیے جدید راڈار سسٹم اور فضائی دفاعی میزائل فروخت کرے گا۔ان ہتھیاروں سے اسرائیل کی طویل فاصلے تک مار کرنے ،فضائی نگرانی کے عمل کو موثر بنانے اور فوجیوں کو ایک جگہ سے دوسری جگہ منتقل کرنے کی صلاحیت میں اضافہ ہوگا۔

اسرائیل کے ایک دفاعی ذریعے کے مطابق چک ہیگل موشے یاعلون سے شام میں جاری خانہ جنگی کے بارے میں بھی تبادلہ خیال کریں گے۔وہ اسرائیلی صدر شمعون پیریز اور وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو کے ساتھ بھی ملاقات کریں گے۔وہ اسرائیل کے بعد اردن ،سعودی عرب ،مصر اور متحدہ عرب امارات جائیں گے۔

امریکا کی جانب سے اسرائیل کے ساتھ اسلحے کی فروخت کی ڈیل اس کے علاوہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کو دس ارب ڈالرز مالیت کے ہتھیار مہیا کرنے کے بڑے پیکج کا حصہ ہے۔اس کے تحت امریکا خطے میں ایران کے مقابلے کے لیے اپنے اتحادی ممالک کی دفاعی صلاحیتوں کو بڑھانے کی غرض سے جدید ہتھیار مہیا کررہا ہے۔اس پیکج کے تحت متحدہ عرب امارات امریکا سے پانچ ارب ڈالرز مالیت کے پچیس ایف 16 ڈیزرٹ فالکن جیٹ خرید کرے گا اور سعودی عرب کو بھی جدید ہتھیار مہیا کیے جائیں گے۔