.

مصر میں 270 سالہ شاہی کچھوے کا انتقال

کچھوا، شاہ فاروق نے گیزا چڑیا گھر کو تحفہ دیا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصری شہر گیزا کے چڑیا گھر میں 270 سالہ مشہور زمانہ شاہی کچھوا گزشتہ روز انتقال کر گیا۔ یہ کچھوا دنیا کا دوسرا قدیم ترین بقید جانور سمجھا جاتا تھا۔

قاہرہ سے شائع ہونے والے 'الیوم السابع' نامی اخبار نے اپنی حالیہ اشاعت میں بتایا کہ 1936 میں مصری بادشاہ کنگ فاروق نے یہ کچھوا گیزا چڑیا گھر کو تحفتا دیا تھا۔

تاریخی کچھوے کے انتقال پر سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹیوٹر پر پیغامات کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے جس میں تبصرہ نگار سیاسی پہلوؤں سے بات کر رہے ہیں۔

ایک ٹیوٹر پیغام میں کہا گیا ہے کہ کچھوے نے 'شاہ فاروق، جمال عبدالناصر، انور سادات اور حسنی مبارک کے ادوار حکومت برداشت کئے لیکن بیچارے سے ڈاکٹر محمد مرسی کے اقتدار کا سورج برداشت نہ ہو سکا۔"

گیزا چڑیا گھر 1891ء میں قائم کیا گیا اور یہ مشرق وسطی اور افریقا کا سب سے بڑا چڑیا گھر ہے۔ 'الیوم السابع' کے مطابق شاہی کچھوا بھارتی شہر کلکتہ میں 'ادویتا' نامی کچھوے کے بعد دنیا کا سب قدیم بقید حیات جانور تھا۔