صدراوباما شامی فضائیہ کے اڈوں پرحملے کا حکم دیں: امریکی سینٹرز

بشار الاسد کی فضائیہ پر حملوں سے اپوزیشن جنگجو مضبوط ہوں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی سینٹ میں متعدد اہم ڈیموکریٹ سینڑوں نے صدر براک اوباما پر زور دیا ہے کہ وہ شام میں جاری جنگ رکوانے کی خاطر براہ راست مداخلت کریں۔ ان امریکی قانون سازوں کا کہنا تھا کہ شامی فوج کے زیر استعمال ہوائی اڈوں پر امریکی حملہ ممکنات میں سے ہے۔

ڈیموکریٹ سینٹر لینزی گراہم کا کہنا ہے کہ اگر شامی حکومت کی فضائی طاقت کو کسی طرح روکا جا سکے تو اس سے بشار الاسد کی اپنے مخالفین پر عسکری برتری کئی گنا کمزور ہو سکتی ہے اور جاری لڑائی کا فیصلہ دنوں میں ہو جائے گا۔

مسٹر گراہم نے مزید کہا کہ شامی فضائیہ کو ملکی فضاؤں میں اپنی دھاک بٹھانے سے روکنے کا ایک ہی ذریعہ ہے کہ جن بیسسز سے یہ جہاز اڑتے ہیں انہیں امریکا کروز میزائل حملوں سے تباہ کر دے۔

ڈیموکریٹ سینٹر کے مطابق اس کارروائی کو عملی جامہ پہنانے کی خاطر بین الاقوامی ہوم ورک درکار ہے، تاہم اس کام کے لئے امریکا کا شام میں اپنی فوج اتارنا ضروری نہیں ہے۔

تاہم ایک دوسرے ڈیموکریٹ سینٹر جان مکین کا کہنا تھا کہ چاہئے یہ بات ثابت ہو جائے کہ شامی حکومت اپنے مخالفین کے خالف زہریلی سرن گیس استعمال نہیں کر رہی تب بھی امریکا کو چاہئے کہ وہ شامی اپوزیشن کی زیادہ سے زیادہ مدد کرے۔ انہوں نے کہا کہ اس مقصد کے لئے امریکا کروز اور پیٹریات میزائل اور بیٹریاں استعمال کر سکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں

  • مطالعہ موڈ چلائیں
    100% Font Size