سعودی عرب نے اوپیک ریسرچ ڈیپارٹمنٹ کا انتخاب جیت لیا

ایرانی نمائندے کو شکست فاش کے بعد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

تیل برآمد کرنے والے ملکوں کی نمائندہ تنظیم "اوپیک" نے ویانا میں ہونے والے اپنے اجلاس میں سعودی عرب کے امیدوار کو اوپیک ریسرچ ڈیپارٹمنٹ کا سربراہ منتخب کیا ہے۔

سعودی عرب کی کمپنی 'ارامکو' سے وابستہ عمر عبدالمجید نے ایرانی مندوب کو شکست دیکر کہ تنظیم کے دوسرے اہم عہدے پر کامیابی حاصل کی۔ ریسرچ ڈیپارٹمنٹ کا سربراہ اوپیک کے جنرل سیکرٹری کے بعد دوسرا ہم عہدہ ہے۔ عمر عبدالمجید، کویتی حسن قبازرد کی جگہ اب اویپک ریسرچ ڈپیارٹمنٹ کے سربراہ کی جگہ لیں گے۔

اوپیک کے ایک مندوب نے موجودہ صورتحال پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ اوپیک کے جنرل سیکرٹری کے انتخاب کے موقع پر سعودی عرب اور ایران کے درمیان کس قدر کشیدگی بڑھ جائے گی۔ اوپیک میں جنرل سیکرٹری کا عہدہ سب سے بڑا ہوتا ہے اور اس پر ضمن میں پائے جانے والے اختلافی صورتحال پر تاحال قابو نہیں پایا جا سکا ہے۔

اوپیک جنرل سیکرٹری تنظیم کا بین الاقوامی فورم میں نمائندہ ہوتا ہے اور تیل کے پیدوار کے بارے میں انجمن کی پالیسیاں وضع کرتا ہے۔ یہی عہدیدار ویانا میں اوپیک ہیڈکوارٹر کا ذمہ دار ہوتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں