.

شام میں کیمیائی اسلحہ استعمال کے ٹھوس ثبوت موجود ہیں: جان کیری

'بشار الاسد کے خوفناک اقدامات انتہائی قابل مذمت ہیں'

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے کہا ہے کہ واشنگٹن کے پاس شامی حکومت کی جانب سے کیمیائی ہتھیار استعمال کرنے کا 'قوی ثبوت' موجود ہے۔

ان خیالات کا اظہار جان کیری نے گوگل گروپ، این بی سی نیٹ ورک اور وزارت خارجہ کے زیراہتمام انٹرنیٹ انٹرویو میں کیا۔ انہوں نے بشار الاسد کی سربراہی میں شامی حکومت کے ان خوفناک اقدامات کی شدید مذمت کی جس کے نتیجے میں ابتک ستر ہزار افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔ 'ہمارے پاس اس بات کے ٹھوس شواہد موجود ہیں کہ شامی حکومت نے زہریلی گیس استعمال کی ہے۔'

یاد رہے کہ جان کیری جمعہ کے روز ماسکو اور روم کے دورے سے واپس لوٹے ہیں جس میں ان کی میزبان ملکوں میں گفتگو کا محور شام کا بحران رہا۔ ان ملکوں کے دورے کے بعد جان کیری کا شامی بحران میں کیمیائی اسلحے کے استعمال سے متعلق بیان اہم پیش رفت شمار ہوتا ہے۔

سوموار کے روز امریکی وائٹ ہاؤس نے اس رائے کا اظہار کیا تھا کہ شام میں کیمیائی اسلحہ کا استعمال بشار الاسد حکومت کی کارستانی ہو سکتی ہے اس میں حکومت مخالف اپوزیشن کا عمل دخل شامل نہیں ہے۔

امریکی صدر براک اوباما نے گزشتہ ماہ کے اواخر میں وعدہ کیا تھا کہ اگر شام میں کیمیائی اسلحے کا استعمال ثابت ہو گیا تو ان کا ملک شام سے متعلق امریکی آپشنز پر نظرثانی کرے گا۔

ادھر ترک وزیر اعظم رجب طیب ایردوآن نے امریکی ٹی وی نیٹ ورک 'این بی سی' پر اعلان کیا تھا کہ شام نے کیمیائی اسلحے کا استعمال کیا ہے اور اس ضمن میں بہت عرصہ قبل امریکا کی متعین کردہ 'ریڈ لائن' عبور کر چکا ہے۔

جمعہ کے روز اپنے انٹرنیٹ انٹرویو میں جان کیری نے شام میں بشار الاسد کے بغیر عبوری حکومت قائم کرنے کی پیش کش کا ایک مرتبہ پھر اعادہ کیا۔