لیبیا: بن غازی میں اسپتال کے نزدیک کار بم دھماکا، 10 افراد ہلاک

سابق صدر معمر قذافی کی حکومت کے خاتمے کے بعد سب سے تباہ کن دھماکا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

لیبیا کے دوسرے بڑے شہر بن غازی میں مرکزی اسپتال کے نزدیک کار بم دھماکے کے نتیجے میں کم سے کم دس افراد ہلاک اور تیرہ زخمی ہو گئے ہیں۔

بن غازی میں ایک سکیورٹی عہدے دار عبدالسلام برغاثی نے بتایا ہے کہ حملہ آوروں نے بارود سے لدی کار شہر کے مرکزی اسپتال کے نزدیک ایک بیکری کے باہر کھڑی کی تھی اور اس کو ریموٹ کنٹرول سے اڑایا گیا ہے۔ان کے بہ قول دھماکے میں تباہ شدہ کار سے کلاشنکوف رائفلیں اور دوسرا اسلحہ بھی برآمد ہوا ہے۔

سابق صدر معمرقذافی کی حکومت کے خاتمے کے بعد لیبیا کے کسی شہر میں یہ سب سے تباہ کن بم دھماکا ہے۔ اس میں لیبی حکام نے ہلاک اور زخمیوں کی تعداد کے بارے میں متضاد اعداد وشمار جاری کیے ہیں۔دارالحکومت طرابلس میں وزیرداخلہ عاشور شوائل نے ایک ٹی وی انٹرویو میں کہا کہ بم دھماکے میں دو یا تین افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

دوسری جانب بن غازی کے پولیس سربراہ طارق الخراز نے بم دھماکے میں تیرہ افراد کی ہلاکت اور اکتالیس کے زخمی ہونے کی اطلاع دی ہے۔لیبیا کی حکومت نواز ملیشیا کے کمانڈر فتحی العبیدی نے کہا ہے کہ بم دھماکے کے الزام میں ایک شخص کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں