مصر میں امریکی اور فرانسیسی سفارتخانوں پر 'دہشت گرد' حملوں کا منصوبہ

القاعدہ سے تعلق رکھنے والے خودکش بمبار قاہرہ میں گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

مصر میں القاعدہ سے تعلق رکھنے والے ایک گروہ کو حراست میں لیا گیا ہے جو امریکی اور فرانسیسی سفارت خانوں پر حملے کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔

مصری تفتیش کاروں کے حوالے سے سرکاری خبر رساں ادارے مڈل ایسٹ نیوز ایجنسی 'مینا' کا کہنا تھا کہ القاعدہ سے تعلق رکھنے والے ایک گروہ کے زیرحراست ارکان کا منصوبہ تھا کہ وہ قاہرہ میں قائم امریکی اور فرانسیسی سفارت خانوں کو بم حملوں کا نشانہ بنائیں۔ ’زیرحراست مشتبہ افراد ان سفارت خانوں پر خودکش کار بم حملوں کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔‘

تفتیش کاروں کے مطابق فرانسیسی سفارت خانے پر حملے کا مقصد مبینہ طور پر مالی میں فرانسیسی فوجی مداخلت کے خلاف احتجاج کرنا تھا۔ تاہم خبر رساں ادارے نے یہ نہیں بتایا کہ امریکی سفارت خانے پر حملے کے منصوبے کا کیا مقصد تھا اور حملہ آوروں نے یہ منصوبہ کیوں بنایا تھا۔

ہفتے کے روز مصر وزیر داخلہ محمد ابراہیم یوسف نے بتایا تھا کہ پولیس نے ایک دہشت گرد سیل کے تین ارکان کو حراست میں لیا ہے، جو چند مغربی سفارتخانوں پر حملوں کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔ ابراہیم کا کہنا تھا کہ زیرحراست یہ تینوں افراد مصری شہری ہیں اور ان کے قبضے سے دس کلوگرام کھاد اور بم بنانے سے متعلق ہدایات کا حامل ایک کمپیوٹر قبضے میں لیا گیا ہے۔

نیوز ایجنسی 'مینا' کے مطابق یہ تینوں افراد پہلے ہی زیرحراست تھے، تاہم سن 2011ء میں سابق صدر حسنی مبارک کے خلاف شروع ہونے والی احتجاجی تحریک کے دوران یہ جیل سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے تھے۔ بتایا گیا ہے کہ زیرحراست تین میں سے دو افراد کو الجزائر اور ایران سے سن 2009ء میں بے دخل کیا گیا تھا۔ان تینوں نے القاعدہ سے روابط کا اعتراف کیا ہے تاہم بم حملوں کی منصوبہ بندی کے الزام کو مسترد کیا ہے۔

ہفتے کے روز مصری وزیر دفاع محمد ابراہیم یوسف نے کہا تھا کہ ان تینوں افراد کے کردی داؤد الاسدی سے روابط تھے۔ الاسدی متعدد مغربی ایشیائی ممالک میں القاعدہ کی سرگرمیوں کا قیادت کرتا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ ان زیرحراست افراد میں سے ایک شخص الجزائر میں القاعدہ کے ارکان سے منسلک ہے جب کہ اس کے پاکستان اور ایران میں بھی متعدد دہشت گرد تنظیموں سے روابط ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں