سعودی عرب میں ایرانی نیٹ ورک سے وابستہ مزید 10 افراد گرفتار

گرفتار مشتبہ افراد میں آٹھ سعودی، ایک لبنانی اور ایک ترک شہری ہے: وزارت داخلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں حکام نے ایران کے مبینہ جاسوسی نیٹ ورک سے تعلق کے الزام میں مزید دس مشتبہ افراد کو گرفتار کر لیا ہے۔

سعودی عرب کے سرکاری ٹیلی ویژن الاخباریہ نے منگل کو وزارت داخلہ کے بیان کے حوالے سے بتایا ہے کہ ''حکام کی ابتدائی تفتیش کے بعد جاسوسی کی سرگرمیوں میں ملوث مزید دس افراد کی گرفتاری عمل میں آئی ہے''۔

گرفتار کیے گئے ان مشتبہ افراد میں آٹھ سعودی ،ایک لبنانی اور ایک ترک شہری ہے۔واضح رہے کہ سعودی عرب نے مارچ میں ایران سے وابستہ جاسوسی کے اس نیٹ ورک کو بے نقاب کیا تھا۔

سعودی وزارت داخلہ کے حکام نے 19 مارچ کو ایران کے سراغرساں ادارے سے تعلق کے شُبے میں سولہ سعودیوں ،ایک ایرانی اور ایک لبنانی کو گرفتار کیا تھا۔انھیں سعودی عرب کے مشرقی صوبے سمیت چار علاقوں سے پکڑا گیا تھا۔

دوسری جانب ایران نے سعودی عرب میں سراغرسانی کے اس نیٹ ورک سے کسی قسم کے تعلق کی تردید کی تھی لیکن سعودی وزارت داخلہ کے ترجمان جنرل منصور الترکی نے اپریل میں ایک بیان میں کہا تھا کہ گرفتار کیے گئے مشتبہ افراد سے ابتدائی تفتیش کے بعد یہ بات سامنے آئی ہے کہ ان کا ایرانی انٹیلی جنس سے براہ راست تعلق تھا۔

برطانوی خبررساں ادارے رائیٹرز نے تب گرفتار کیے گیے تمام سعودیوں کے بارے میں بتایا تھا کہ وہ اہل تشیع اقلیت سے تعلق رکھتے ہیں اور اس نے یہ اطلاع سعودی عرب کی اس کمیونٹی کے لیڈروں کے حوالے سے دی تھی۔درایں اثناء جنرل ترکی نے بتایا ہے کہ مارچ میں گرفتار کیے گئے لبنانی شخص کو رہا کردیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں