.

شام کے مستقبل میں بشار الاسد کی کوئی جگہ نہیں: سعود الفیصل

سعودی وزیر خارجہ اپنے بھارتی ہم منصب کے ہمراہ مشترکہ نیوز کانفرنس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وزیر خارجہ شہزادہ سعود الفیصل نے کہا ہے کہ سعودی عرب، شام کے مستقبل میں شامی صدر بشار الاسد کے کردار کو مسترد کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ شامی تنازعے کے بارے میں جنیوا ٹو کانفرنس میں بشار الاسد یا ان کے قریبی حواریوں کی شرکت کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا کیونکہ شہزادہ سعود الفیصل کے بہ قول ان کے ہاتھ شامیوں کے خون سے رنگے ہوئے ہیں۔

مشرقی شہر جدہ میں اپنے بھارتی ہم منصب سلمان خورشید کے ہمراہ نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سعود الفیصل نے اعلان کیا کہ ان کا ملک شامی عوام کی حمایت کرتا ہے۔ انہوں [شامیوں] نے دوٹوک الفاظ میں واضح کر دیا ہے کہ شام میں بشار الاسد کا کوئی کردار نہیں ہونا چاہئے۔ ہم شامی عوام کے فیصلے کی تائید کرتے ہیں۔

شہزادہ سعود الفیصل نے شام کی مجوزہ عبوری حکومت کو بشار الاسد حکومت کا متبادل بنانے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے نے کہا اس عبوری حکومت کو بشار الاسد کا اقتدارختم ہونے پر امور مملکت چلانے کی غرض سے تمام اختیارات دیئے جائیں۔

انہوں نے کہا کہ شامی اپوزیشن کے نمائندہ قومی اتحاد کی بھی ہر ممکن مدد کی جائے۔ نیز شامیوں کو بشار الاسد کی قاتل مشین سے اپنا بچاو کا ہر ممکن موقع فراہم کیا جائے۔ سعودی وزیر خارجہ نے کہا کہ شامی عوام کو تمام طرح کی انسانی امداد جاری رہکھنے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔