امریکا میں بم دھماکے کی سازش پر لبنانی نوجوان کو 23 سال قید

ایف بی آئی کے ایجنٹوں نے مجرم کوجعلی بم چلاتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکا کے شہر شکاگو میں ایک مشہور بیس بال اسٹیڈیم کے نزدیک بم پھوڑنے کی سازش کے جرم میں ایک لبنانی نوجوان کو تیئس سال قید کی سزا سنا دی گئی ہے۔

لبنانی شہری سامی سمیر حسون کو 2010ء میں اس بم دھماکے کی سازش کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا اور اس وقت وہ امریکا کا قانونی رہائشی تھا۔اسے شکاگو کی وفاقی عدالت کے جج رابرٹ جیٹلمین نے جمعرات کو سزا سنائی ہے۔اس سزا کے خاتمے کے بعد اس نوجوان کی جب رہائی عمل میں آئے گی تو اسے امریکا بدر کردیا جائے گا۔

پچیس سالہ سمیر حسون نے گذشتہ سال عدالت کے روبرو بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے والے ہتھیار کو چلانے اور دھماکا خیز مواد کے استعمال کے ایک جرم میں قصوروار ہونے کا اقرار کیا تھا۔اس نے وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف بی آئی) کے ایک ذریعے کے سامنے اعتراف کیا تھا کہ وہ شکاگو کی تجارت اور شہر کی سیاسی اسٹیبلشمنٹ کو تہس نہس کرنا چاہتا تھا۔

ایف بی آئی کے اس ایجنٹ نے خود کو لبنانی نوجوان کے سامنے ایک دہشت گرد کے طور پر متعارف کرایا تھا اور اس نے انقلاب کے لیے سازش کو عملی جامہ پہنانے سے اتفاق کیا تھا۔

ایف بی آئی کے ایجنٹ نے شکاگو میں ممکنہ اہداف کے بارے میں کئی ہفتے تک مجرم سے تبادلہ خیال کیا تھا۔اس ایجنٹ نے حسون کو دھماکا خیز مواد کا ایک پیکٹ دیا تھا جس سے اس کے بہ قول شہر کے نصف حصے کو تباہ کیا جاسکتا تھا۔

یہ سادہ لوح لبنانی نوجوان ایف بی آئی کے اس ایجنٹ کے جھانسے میں آگیا تھا۔ایجنٹ نے اس کو جعلی بم کا تھیلا تھمایا تھا۔اس نے اس کوریگلے بیس بال اسٹیڈیم کے ایک کوڑے دان میں پھینک دیا اور پھر ٹائمر کو دبا دیا تھا۔اس وقت وہاں ایک کنسرٹ کا انعقاد ہورہا تھا۔اس کے ٹائمر کو دبانے سے دھماکا شماکا تو کچھ نہیں ہوا تھا البتہ اس کو بڑے آرام سے موقع پر ہی گرفتار کر لیا گیا۔

شمالی ضلع ایلنائے کے امریکی اٹارنی گیری شپیرو کا کہنا ہے کہ ''سمیر حسون نے گفتگوؤں کے دوران یہ واضح کردیا تھا کہ وہ بے گناہوں کو بم دھماکے میں ہلاک کرنے پر آمادہ ہے۔وہ شکاگو شہر میں افراتفری پھیلانے کے لیے پولیس افسروں کو گولیوں کا نشانہ بنانے کو بھی تیار تھا''۔اس وکیل کے بہ قول لبنانی نوجوان نے اپنے فعل سے ثابت کردیا تھا کہ وہ خالی خولی دعوے نہیں کررہا تھا بلکہ وہ اپنے الفاظ کو دلیری سے عملی جامہ پہنانا چاہتا تھا۔

ایف بی آئی نے لبنانی مجرم کو عدالت کی جانب سے سخت سزا کا خیر مقدم کیا ہے اور اس سازش کو بے نقاب کرنے کے لیے اپنے خفیہ ایجنٹوں کی جانفشانی سے کام کی تحسین کی ہے۔ایف بی آئی کے شکاگو بیورو کے سربراہ کوری نیلسن نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ''ہم امریکیوں پر حملوں کو روکنے اور اس طرح کے حملوں کی منصوبہ بندی کرنے والے افراد اور گروپوں کی شناخت اور انھیں انصاف کے کٹہرے میں لانے کے لیے چوکنّا رہیں گے''۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں