.

ترک فوج کی شامی علاقے سے فائرنگ کے ردعمل میں جوابی کارروائی

شام، ترک سرحد پر فائرنگ کے تبادلے میں کوئی شخص زخمی نہیں ہوا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی میں شام کے سرحدی علاقے سے فوجی اہداف پر فائرنگ کی گئی ہے جس کے جواب میں ترک فوجیوں نے بھی شامی علاقے کی جانب فائرنگ کی ہے۔

ترک فوج نے منگل کو جاری کردہ ایک بیان میں کہا ہے کہ ''شام کے سرحدی علاقے کی جانب سے سوموار کی رات بکتربند گاڑی اور دیگر فوجی گاڑیوں پر ساٹھ گولیاں فائر کی گئی تھیں۔اس حملے کے جواب میں شامی علاقے کی جانب جوابی فائرنگ کی گئی ہے''۔شامی علاقے کی جانب سے ترک فوجیوں پر فائرنگ سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

گذشتہ جمعرات کو بھی ترک فوج نے شامی علاقے کی جانب سے آنے والی گولیوں کی بوچھاڑ کے جواب میں فائرنگ کی تھی۔ترک فوج نے ایک بیان میں بتایا تھا کہ سرحدپار تین سے پانچ افراد پر مشتمل ایک گروپ نے ایک فوجی گاڑی کی جانب کوئی پندرہ گولیاں فائر کی تھیں۔تاہم اس حملے میں کوئی فوجی زخمی نہیں ہوا۔ترک فوجی اس گاڑی پر سرحدی علاقے میں گشت کر رہے تھے۔

ترک فوج ماضی میں شام کے سرحدی علاقے کی جانب سے توپ خانے سے فائر کیے گئے گولوں کے جواب میں مارٹر فائر کرچکی ہے لیکن یہ پہلا موقع ہے کہ اس نے شامی علاقے سے فائرنگ کے جواب میں فائرنگ کی ہے۔ترک فوجیوں کی فائرنگ سے شامی علاقے میں جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ملی ہے۔