.

افغانستان میں چیک پوائنٹ پر فائرنگ سے 6 پولیس اہلکار ہلاک

دو پولیس اہلکار گاڑیوں اور اسلحے سمیت لاپتا، اغوا یا حملہ آور ہونے کا شُبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افغانستان کے جنوبی صوبہ ہلمند میں ایک چیک پوائنٹ پر تعینات چھے پولیس اہلکاروں کو فائرنگ کر کے ہلاک کردیا گیا ہے اور وہاں سے دو اہلکار پراسرار طور پر لاپتا ہوگئے ہیں۔

یہ واقعہ ہلمند کے ضلع موسیٰ قلعہ میں بدھ کی رات پیش آیا ہے۔اس ضلع کے پولیس سربراہ نیامت اللہ ثمیم نے بتایا ہے کہ پولیس اہلکاروں کی لاشیں چیک پوائنٹ کے نزدیک ایک خیمے سے ملی ہیں۔دو پولیس اہلکار اسلحے اور گاڑیوں سمیت لاپتا ہیں اور ان کے بارے میں فوری طور پر کچھ کہنا مشکل ہے کہ انھیں حملہ آور اپنے ساتھ اغوا کر کے لیے گئے ہیں یا وہ اپنے ساتھی پولیس اہلکاروں کو قتل کرنے کے بعد فرار ہوئے ہیں۔

افغان سکیورٹی اہلکاروں کے اپنے پیٹی بند ساتھیوں یا غیرملکی فوجوں پر حملے عام ہیں اور ان حملوں کی وجہ سے افغان فورسز اور امریکا کی قیادت میں نیٹو فوجوں کے درمیان عدم اعتماد کی فضا پائی جاتی ہے۔افغان حکومت ضروری احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کے باوجود ''انسائیڈ حملوں'' کی روک تھام میں ناکام رہی ہے۔

دوسری جانب طالبان مزاحمت کار بھی خبردار کرچکے ہیں کہ وہ افغان سکیورٹی فورسز میں دراندازی کرکے انسائیڈ حملوں کا سلسلہ جاری رکھیں گے۔واضح رہے کہ 28 مئی کو جنوبی افغانستان میں ایسے ہی واقعہ میں دو افغان پولیس اہلکاروں نے ایک چیک پوائنٹ پر اپنے کمانڈر اور چھے ساتھیوں کو فائرنگ کر کے ہلاک کردیا تھا اور پولیس کی گاڑی میں اسلحے سمیت فرار ہوگئے تھے۔5مئی کو ایک افغان فوجی نے دو امریکی میرینز کو گولی مار کر ہلاک کردیا تھا۔

جنگ زدہ ملک میں حالیہ ہفتوں کے دوران مزاحمت کاروں کی سرگرمیوں میں تیزی آئی ہے اور وہ افغان سکیورٹی فورسز کے علاوہ غیرملکی فوجوں کو اپنے حملوں کا نشانہ بنا رہے ہیں۔اس دوران ہزاروں غیرملکی فوجی 2014ء کے آخر تک افغانستان سے مکمل انخلاء کی بھی تیاری کررہے ہیں اور وہ اپنی تعیناتی والے علاقوں کا کنٹرول افغان فورسز کے حوالے کر کے رخت سفر باندھ رہے ہیں۔

طالبان اور دوسرے مزاحمت کاروں کی حالیہ سرگرمیوں کے پیش نظر ان خدشات کا اظہار کیا جارہا ہے کہ افغان فورسز غیرملکی فوج کے انخلاء کے بعد ملک میں امن وامان کی صورت حال پر قابو پانے کی صلاحیت نہیں رکھتی ہیں اور غیر ملکی فوج کے انخلاء کے بعد خانہ جنگی کا شکار ملک مزید بد امنی کا شکار ہو جائے گا۔