.

لیبیا کی قومی اسمبلی کے نئے صدر کا انتخاب

سابق صدر معمر قذافی کے آبائی شہر سرت میں حملے میں 6 فوجی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا کی بربر اقلیت سے تعلق رکھنے والے نوری ابو سہمین کو جنرل نیشنل کانگریس (قومی اسمبلی) کا نیا صدر منتخب کر لیا گیا ہے۔

جنرل کانگریس کے صدر کے انتخاب کے لیے منگل کو طرابلس میں رائے شماری ہوئی ہے۔ایوان میں موجود کانگریس کے ایک سو چوراسی میں سے چھیانوے ارکان نے نوری کے حق میں ووٹ دیا ہے جبکہ ان کے مدمقابل الشریف الوافی کے حق میں اسّی ووٹ ڈالے گئے۔

لیبیا کی منتخب اسمبلی کے سابق صدر محمد مقریف گذشتہ ماہ ایک قانون کی منظوری کے بعد مستعفی ہوگئے تھے۔اس قانون کے تحت سابق مقتول صدر معمر قذافی کی حکومت میں اہم عہدوں پر فائز رہنے والی شخصیات پر سرکاری عہدے رکھنے پر پابندی عاید کردی گئی تھی۔

ابو سہمین کی سربراہی میں لیبی کانگریس کی متخب کردہ ایک کمیٹی ملک کا نیا آئین تیار کرے گی۔ان کا انتخاب ایک ایسے وقت میں عمل میں آیا ہے جب لیبیا میں ایک مرتبہ پھر تشدد میں اضافہ ہوگیا ہے اور آج ہی سابق مقتول صدر معمر قذافی کے آبائی شہر سرت میں مسلح افراد کے ایک چیک پوائنٹ پر حملے میں چھے سرکاری فوجی مارے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ لیبیا میں 2012ء میں بعد از قذافی پہلے پارلیمانی انتخابات منعقد ہوئے تھےاور ان میں جنرل نیشنل کانگریس کے دو سو ارکان کا انتخاب عمل میں آیا تھا۔اس نے سابق غیر منتخب عبوری قومی کونسل کی جگہ لے تھی۔اس منتخب اسمبلی کا اہم کام ملک کے نئے آئین کی تیاری ہے۔