.

مصر میں ہنگامہ آرائی، امریکی سمیت 3 افراد ہلاک

امریکا کی اپنے شہریوں کو مصر کا سفر موخر کرنے کا مشورہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر میں صدر محمد مرسی کے خلاف مظاہروں کے دوران ہلاک ہونے والے تین افراد میں سے ایک امریکی شہری بتایا جاتا ہے۔

'العربیہ' کے نامہ نگاروں کے مطابق قاہرہ حکومت مخالف مظاہروں کے دوران دو افراد اسکندریہ اور ایک شخص پورٹ سعید میں ہلاک ہوا۔ مصری حکام نے بتایا کہ جاں بحق ہونے والا امریکی شہری اسکندریا میں امریکی ثقافتی مرکز میں کام کرتا تھا۔ وہ صدر مرسی کے حامیوں اور مخالفین کے مابین ہونے والے تصادم کی تصاویر بناتے ہوئے ہلاک ہوا۔ امریکی حکام نے اس ہلاکت کی تصدیق کر دی ہے۔

صدر مرسی کی صدارت کا ایک سال مکمل ہونے پر مصر کی مختلف شہروں میں ان کے حلیفوں اور حریفوں کی جانب سے نکالی جانے والی ریلیوں میں ہنگامہ آرائی کی اطلاعات ہیں۔ صدر مرسی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ بدامنی مصر کو مفلوج کرنے کے لیے پھیلائی جا رہی ہے۔

دوسری جانب امریکی حکومت نے مصر جانے والے اپنے شہریوں کو سفر مؤخر کرنے کا مشورہ دیا ہے۔ اسی طرح وزارت خارجہ نے محدود پیمانے پرغیر ہنگامی سفارتی عملے اور ان کے اہل خانہ کو مصر چھوڑنے کی ہدایت کر دی ہے۔ اس سے قبل چند دیگر عرب ملک بھی مصر میں موجود اپنے شہریوں کو خبردار رہنے کا مشورہ دے چکے ہیں۔