شامی اپوزیشن کو اسلحہ فراہمی کے فیصلے پر عملدرآمد کا مطالبہ

"مظلوموں کے حمایتی تقسیم جبکہ ان پر ظلم ڈھانے والے متحد ہیں"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے وزیر خارجہ شہزادہ سعود الفیصل نے یورپی یونین پر زور دیا ہے کہ وہ شامی اپوزیشن کو اسلحہ فراہمی پر پابندی ختم کرنے سے متعلق اپنے فیصلے کو عملی جامہ پہنائے۔

خلیج تعاون کونسل اور یورپی یونین کے 23 مشترکہ وزارتی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے شہزادہ فیصل نے اس بات کی ضرورت پر زور دیا کہ بین الاقوامی برادری شام کو اسلحہ فراہمی سے روکنے اور وہاں سے غیر ملکی جنگجووں کو بیدخل کرنے کے بارے میں اپنا نقطہ نظر دوٹوک الفاظ میں واضح کرنا چاہئے۔

شہزادہ سعود الفیصل نے بتایا شامی اپوزیشن کو مسلح کرنے سے متعلق بعض حلقوں کے تحفظات موجود ہیں۔ ان کے بہ قول شامی مسئلے کے حل کی راہ میں اصل رکاوٹ ان حلقوں کے درمیان اختلافات ہیں جو مظلوم شامیوں کی مدد کرنا چاہتے ہیں جبکہ اس کے مقابلے میں اپوزیشن کی صفوں میں اتحاد موجود ہے۔

شہزادہ سعود الفیصل نے اپنی گفتگو سمیٹتے ہوئے کہا کہ شامی اپوزیشن غیر ملکی 'قابضین' سے نبرد آزما ہے۔ یہی حقیقیت شامی اپوزیشن کی جدوجہد کو جواز فراہم کرتی ہے اور دنیا ان کے اپنی حفاظت اور قابض قوتوں کے خلاف اسلحہ اٹھانے کے اقدام کی اسی لئے توثیق کر رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں