.

ماہ صیام کے دوران معتمرین کی سہولت کے لیے خصوصی پلان تیار

وزیرداخلہ کا معتمرین کا تحفظ یقینی بنانے کا عزم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی حکومت نے امسال ماہ صیام کے دوران دنیا بھر سے حجاز مقدس آنے والے زائرین اور معتمرین کو ہرطرح کی سہولیات فرہم کرنے کا ایک جامع منصوبہ تیار کیا ہے۔

سعودی وزیرداخلہ شہزادہ محمد بن نائف بن عبدالعزیز نے بتایا کہ انہوں نے معتمرین کو ماہ صیام میں ہرطرح کی سہولت اور انہیں تحفظ فراہم کرنے کا ایک نیا پلان ترتیب دیا ہے۔ یہ پلان حرم کے جاری توسیعی پروگرام کے تناظر میں تیار کیا گیا ہے تاکہ سمعتمرین حضرات کو مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

جدہ میں حرم شریف کے امورسے متعلق اجلاس سے خطاب میں وزیر داخلہ شہزادہ نائف نے کہا کہ ماہ رمضان اور عیدالفطر کے موقع پرحرم میں معتمرین کی سیکیورٹی کو یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے فوری طورپر نمٹا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ حرم مکی شریف کے توسیعی منصوبے کے دوران معتمرین کو مناسک کی ادائیگی میں جو مشکل پیش آٓئے گی اسے ہرممکن طریقے سے دور کیا جائے گا۔ زیادہ رش والے مقامات کی کڑی نگرانی کی جائے گی اور زائرین کو بلا ضرورت جمع ہونے سے روکا جائے گا۔

کسی ناخوشگوار واقعے یا لڑائی جھگڑے کی صورت میں متعلقہ انتظامیہ فوری حرکت میں آئے گی تاکہ ہر قسم کے جانی اور مالی نقصان سے بچا جاسکے۔ مسجد حرم کے داخلی اور خارجی دراوزوں پر معتمرین اور نمازیوں کو کھڑے ہونے سے روکا جائے گا۔ اگر کسی خاص وجہ سے نمازیوں کو حرم میں داخلے سے روکا گیا تو انہیں نماز کے اوقات میں مسجد کےصحن ہی میں نماز ادا کرنا ہوگی۔ ورکنگ ایریازمیں معتمرین اور غیرمتعلقہ افراد کےجانے پر پابندی ہوگی اور نمازیوں کو متبادل راستہ فراہم کیا جائے گا۔