.

سعودی عرب سمیت متعدد ممالک میں بدھ سے ماہ صیام کا آغاز

چاند کی عدم رؤیت پر شعبان المعظم کے 30 دن مکمل ہونے پر رمضان کی آمد کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسلام کی جائے پیدائش سعودی عرب سمیت بیشتر خلیجی اور عرب ممالک میں بدھ دس جولائی سے مسلمانوں کے مقدس مہینے رمضان المبارک کا آغاز ہورہا ہے۔

سعودی عرب، مصر، اردن، متحدہ عرب امارات اور فلسطین کے حکام نے سوموار انتیس شعبان المعظم کو اعلان کیا ہے کہ رمضان المبارک کا چاند نظر آنے کی کوئی شہادت نہیں ملی ہے۔اس لیے ان ممالک میں بدھ کو یکم رمضان ہوگی۔

سعودی عرب کے شاہی دیوان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ 8 جولائی کو رمضان المبارک کا چاند کہیں نظر نہیں آیا ہے۔اس لیے بدھ کے روز پہلا روزہ ہوگا۔مصر کےمفتی شوقی علام نے بھی دس جولائی سے ہی رمضان کے مقدس مہینے کے آغاز کا اعلان کیا ہے۔

مسلمان روایتی طور اپنے ہجری کیلنڈر کے مہینے کا آغاز چاند کی رٶیت سے کرتے ہیں اورمختلف ممالک اور خطوں میں چاند کئی گھنٹوں کے فرق سے طلوع ہوتا اور نظر آتا ہے جس کی وجہ سے ہر جگہ نئے مہینے کا آغاز بھی ایک یا دودن کے فرق سے ہوتاہے اوردنیا بھر کے تمام مسلم ممالک ایک ہی دن میں روزہ رکھنے کے بجائے اپنے اپنے ہاں چاند کی رٶیت کے اعتبار سے ماہ صیام کا آغاز کرتے ہیں۔

روزہ اسلام کے پانچ ارکان میں سے تیسرا رکن ہے۔رمضان المبارک کے دوران مسلمان علی الصباح نماز فجر سے قبل سحری کرتے اورغروب آفتاب کے بعد روزہ افطار کرتے ہیں۔اس دوران انھیں کچھ بھی کھانے پینے کی اجازت نہیں ہے۔روزہ کی حالت میں مسلمانوں کو فواحش،منکرات اور فضول کاموں سے بچنے کا حکم دیا گیا ہے اورانہیں تقویٰ کے حصول کے لیے دوران روزہ بعض جائز امور سے بھی منع کیا گیا ہے۔

ہجری کیلنڈر میں چونکہ چاند کی رٶیت یعنی قمری چکر کی پیروی کی جاتی ہے،اس لیے ہرسال رمضان المبارک کا آغاز گریگورین کیلنڈر کے مقابلے میں دس یا گیارہ دن پہلے ہوتا ہے۔اس مرتبہ بائیس روزے جولائی میں آرہے ہیں اور باقی سات یا آٹھ روزے اگست میں آئیں گے۔اس گرم موسم میں روزے دنیا بھر کے ڈیڑھ ارب سے زیادہ مسلمانوں کے لیے ایک امتحان ہوں گے۔

دوسری جانب پاکستان میں چاند دیکھنے کیلیے رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس کل کراچی میں ہو گا۔

بعد نماز عصر محکمہ موسمیات کے دفتر میں ہونے والے مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے اجلاس کی صدارت مفتی منیب الرحمن کریں گے جس میں علمائے دین سمیت ماہرین موسمیات اور فلکیات بھی شرکت کریں گے