.

القاعدہ کی یمن میں اپنے نائب امیر سعید الشھری کی ہلاکت کی تصدیق

الشھری کا نام سعودی سیکیورٹی اداروں کو مطلوب افراد کی فہرست میں شامل تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے علاقے جزیرہ نما عرب میں سرگرم القاعدہ کا نائب امیر سعيد الشهری المكنى (ابو سفيان الازدی) امریکی ڈرون حملے میں ہلاک ہو گیا۔

اس امر کی تصدیق ریجن میں القاعدہ کے عہدیدار ابراہیم الربائش کی آن لائن پوسٹ کردہ ویڈیو بیان میں بدھ کے روز ہوئی۔ عہدیدار نے بیان میں یہ واضح نہیں کیا کہ امریکی ڈرون نے سعودی عرب کو مطلوب افراد کی فہرست میں شامل سعید الشھری کو کب اور کس جگہ نشانہ بنایا۔

اگر سعید الشھری کی ہلاکت کی خبر درست ثابت ہوتی ہے تو جزیرہ نما عرب ونگ میں القاعدہ کے قیام کے بعد سے ہلاک کئے جانے والے وہ سب سے اہم رہنما ہوں گے۔ سعودی نژاد سعید الشھری کو ہلاک کرنے کی پہلے بھی چار مرتبہ کوشش کی جا چکی ہے۔

موقر امریکی جریدے 'فارن پالیسی' کے مطابق اس سال جنوری میں بھی سعید الشھری کی ہلاکت کی خبر آئی تھی۔ یہ خبر یمن کی سرکاری خبر رساں ایجنسی نے جاری کی تھی اور امریکا میں یمنی سفارتخانے کے ترجمان محمد الپاشا نے اس خبر کے درست ہونے کی تصدیق بھی کی تھی۔

اس سے پہلے سن 2009ء میں الشھری کے ایک امریکی کرویز میزائل حملے میں ہلاکت جبکہ گذشتہ برس ستمبر میں ایک یمنی نیوز ویب سائٹ نے ان کی امریکی ڈرون حملے میں ہلاکت کی افواہ چلائی تھی۔