.

مصری فوج نے سڑکیں بلاک کرنے والے مظاہرین کی فوٹیج بنا لی

مظاہرین کےخلاف پولیس کارروائی، سات جاں بحق، درجنوں زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصری فوج نے معزول صدر ڈاکٹر مرسی کی برطرفی کے خلاف مظاہرہ کرنے والوں کی ایسی ویڈیو جاری کی ہے جس میں انہیں وسطی قاہرہ میں سڑکیں بلاک اور گاڑیوں پر حملے کرتے دکھایا گیا ہے۔

پولیس نے تاریخی رمسس اسکوائر کے'' قاہرہ 6 اکتوبر بریج'' پر موجود ہزاروں پر امن مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے سخت کارروائی کی جس سے سات افراد جاں بحق اور درجنوں زخمی ہو گئے ۔

اخوان المسلمون کی قیادت نے واضح کیا کہ شہری پر امن مظاہرہ کر رہے تھے اور مظاہرے کو متشدد بنانے میں فوج، اندرونی سلامتی کے ادارے اور ذرائع ابلاغ کے مضصوص عناصر نے اہم کردار ادا کیا۔

اخوان المسلمون نے اس وقت تک پر امن مظاہروں کی یقین دہانی کرائی جب تک محمد مرسی اقتدار میں واپس نہیں آ جاتے۔ مزاحمت کاروں نے بدھ کے روز مکمل عبوری کابینہ کے منظر عام پر آنے کے بعد وزیراعظم کے گھر کے باہر بھی پرامن احتجاج کیا۔