.

دبئی میں غیر مسلم 28 جولائی کو 'روزہ' رکھیں گے

ورلڈ ٹریڈ سینٹر میں غیر مسلم 'روزہ داروں' کے لئے خصوصی افطار ڈنر کا اہتمام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

دبئی فیسٹیول اور ریٹیل اسٹبلیشمنٹ کی جانب سے 28 جولائی کو دبئی ورلڈ ٹریڈ سینٹر میں روزے کی برکات سےغیر مسلموں کو متعارف کرانے کے لیےایک منفرد افطار پارٹی کا اہتمام کیا جا رہا ہے۔ افطاری کے اس پروگرام میں ہر خاص و عام کو شرکت کی دعوت دی گئی ہے۔

اہم بات یہ ہو گی کہ دبئی فیسٹیول کی طرف سے اس تقریب میں دلچسپی کے حامل غیر مسلموں کو بھی روزہ رکھنے کے لیے کہا گیا ہے تاکہ سارا دن اپنے جسم اور روح پر روزے کے اثرات اور افطاری کی لذت و برکات کا براہ راست تجربہ کر سکیں۔

دبئی فیسٹیول میں تعلقات عامہ کی سینئر منیجر خدیجہ ترکی کا اس سلسلے میں کہنا ہے کہ غیر مسلموں کو افطار میں مدعو کرنے کا مقصد انہیں اس تجربہ میں شریک کرنا ہے کہ روزہ صرف کھانے اور پینے سے کنارہ کشی اختیار کرنا نہیں ہے بلکہ یہ اس سے کہیں زیادہ ہے ۔ انہوں نے مزید کہا وہ کسی کو تبدیلی مذہب پر راغب کرنا نہیں بلکہ یہ سب اس لیے کیا جا رہا ہے کہ روزے کے بارے میں یہ آگاہی پیدا ہو کہ روزہ درحقیقت ہے کیا۔"

خدیجہ ترکی کے مطابق وہ مکمل اعتماد سے کہہ سکتی ہیں کہ روزہ دار ہی محسوس کر سکتا ہے کہ روزہ رکھنے کی وجہ سے کیسے اس کے اندر خوشگوار تبدیلیاں رونما ہوتی ہیں، اور اس کا طرزعمل کس طرح تبدیل ہوتا ہے اور دماغ اور جسم کا ردعمل کیسے بہتر ہو جاتا ہے۔ روزہ جسمانی لحاظ کے علاوہ کئی دوسرے طریقوں سے انسان ہر اثر انداز ہوتا ہے جیسا کہ انسانی مزاج میں تحمل اور برداشت کا بڑھ جانا، کام پر مکمل دھیان ہوجانا وغیرہ وغیرہ ۔ بتایا گیا ہے کہ 28 جولائی کو دبئی ورلڈ ٹریڈ سینٹر میں ہونے والی تقریب افطار میں 250 افراد کی شرکت متوقع ہے۔