اسرائیلی خاتون کو میڈیا کی غلطی نے مصری وزیر بنا دیا

مھا الرباط کی جگہ مھا زحالقہ کی تصاویر شائع ہوئی تھی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

مصر میں گذشتہ ہفتے عبوری کابینہ کا اعلان اس وقت اسرائیل کی عرب خاتون شہری کے لئے حیرت کا باعث بن گیا کہ جب کابینہ میں نامزد وزیر صحت کی جگہ ان کی تصویر مقامی میڈیا میں شائع ہوئی۔

مصر کی عبوری کابینہ میں وزیر صحت مھا الرباط کی جگہ مصری اخبارات میں عربی النسل پینتیس سالہ مھا زحالقہ اسرائیلی میں سیاسی ورکر اور ماہر تعلیم کی تصاویر بکثرت شائع ہوئیں، جس پر انہیں انتہائی حیرت ہوئی۔

زحالقہ نے معروف آن لائن اسرائیلی اخبار 'وائی نیٹ' پر اپنے تبصرے میں بتایا کہ مصری اخبارات میں نئی وزیر صحت کی جگہ ان کی تصویر کی اشاعت کا انہیں فیس بک پر اپنے چند دوستوں کے ذریعے پتا چلا۔

ان کا کہنا تھا کہ اپنی تصویر 'بطور مصری وزیر کے طور پر دیکھ کر مجھے شدید دھچکا لگا تاہم میں نے اسے ہلکے پھلکے انداز میں ہی لیا کیونکہ میرے پاس اس کے جواب میں کچھ کرنے کے بہت محدود مواقع تھے۔

زحالقہ کا کہنا تھا کہ میری تصویر کے ذریعے مصر کی کابینہ میں شامل خاتون وزیر کی جددیت اور روشن خیالی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے، لیکن روشن خیالی کے پرچار کا یہ طریقہ کار اچھا نہیں ہے۔ مھا اپنی راتوں رات مشہوری کو مصر کے ساتھ یکجہتی کے لئے استعمال کر رہی ہیں۔ "میں دل کی گہرائیوں سے مصری عوام کے لئے امن کی دعا گو ہوں۔ میں انہیں [اہل مصر] کو زندگی کے ہر شعبے میں عرب دنیا کا سرخیل سمجھتی ہیں۔"

راتوں رات مشہوری پر تبصرہ کرتے ہوئے مھا زحالقہ نے کہا کہ "اس تصویری خلط مبحث سے انہیں نقصان پہنچنے کا خدشہ بھی لاحق ہے، تاہم اس غلطی میں میرا قصور شامل نہیں ہے۔ مجھے امید کہ جو کچھ ہوا اسے مصری عوام سمجھنے کی کوشش کریں گے۔ میں صرف اسرائیل ہی میں نہیں بلکہ پوری عرب دنیا میں مشہور ہو گئی ہوں۔"

برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق اس سے قبل وزیر ماحولیات لیلی راشد اسکندر کی تصویر بھی مشتہر کی گئی تھی تاہم جلد ہی یہ حقیقت سامنے آ گئی تھی کہ وہ تصویر لیلی راشد کی نہیں بلکہ طبی شعبے سے وابستہ دبئی میں مقیم لیلی الجاسمی کی تھی۔

ابتدا میں غلطی سے ایسی تصاویر شائع ہونے کے چند لمحات بعد ہی مبصرین نے مصر کی عبوری کابینہ کی تین میں سے دو خواتین وزراء کے حسن کی تعریفیں شروع کر دیں۔ اس خبر کی نشان دہی فیس بک پر مصریوں نے بھی کی اور انہوں نے غلط وزراء کی تصاویر کو پہلو بہ پہلو رکھ کر انکی اصل شناخت ظاہر کر دی۔

مقبول خبریں اہم خبریں