شہزادہ ولیم باپ بن گئے، شاہی خاندان کو تیسرا ولی عہد مل گیا

پوتے کی پیدائش پر شہزادہ چارلس شاداں اور فرحاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانوی شہزادہ ولیم نے اپنے بیٹے کی پیدائش پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ اتنے خوش کبھی بھی نہیں ہوئے تھے۔ ولیم کی اہلیہ کیٹ میڈلٹن نے پیر کی دوپہر بیٹے کو جنم دیا۔

برطانوی شاہی خاندان کے گھر میں اس نئی خوشی کے موقع پر برطانوی وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون اور امریکی صدر باراک اوباما نے بھی مبارکبادی پیغامات ارسال کیے ہیں۔ اکتیس سالہ ولیم بچے کی پیدائش کے موقع پر اپنی اہلیہ کے ہمراہ تھے۔ خبر رساں ادارے اے ایف پی نے شاہی ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ زچہ و بچہ دونوں ہی خیریت سے ہیں۔ شاہی خاندان کے مطابق پیدائش کے وقت اس نئے مہمان کا وزن آٹھ پاؤنڈ اور چھ اونس تھا۔اکتیس سالہ ولیم نے کہا ہے کہ وہ اپنے بیٹے کی پیدائش پر انتہائی خوش ہیں۔ ولیم اور میڈلٹن نے پیدائش سے قبل اپنی اولاد کی جنس جاننے کی کوشش نہیں کی تھی، اس لیے کسی کو بھی معلوم نہیں تھا کہ بیٹا ہو گا یا بیٹی۔

جیسے ہی شاہی خاندان کی طرف سے اعلان کیا گیا کہ برطانوی تخت کا تیسرا دعویدار اس دنیا میں آ گیا ہے تو عوام کی ایک بڑی تعداد خوشیاں مناتے ہوئے بیکنگھم پیلس پہنچ گئی۔ پرنس چارلس اور شہزادہ ولیم کے بعد اب یہ نومولود بادشاہ بننے کی فہرست میں تیسرے نمبر پر ہو گا۔

شاہی خاندان کی طرف سے جاری کیے گئے بیان کے مطابق میڈلٹن کو پیر کی صبح سینٹ میزینز ہسپتال میں منتقل کیا گیا تھا اور انہوں نے عالمی وقت کے مطابق تین بجکر چوبیس منٹ پر لڑکے کو جنم دیا۔ وہ ایک رات پیڈنگٹن میں واقع اسی ہسپتال میں ہی گزاریں گی۔ یہ وہی ہسپتال ہے جہاں 1982ء میں شہزادی ڈیانا نے پرنس ولیم کو جنم دیا تھا۔

ستاسی سالہ ملکہء برطانیہ اور ولی عہد چارلس نے بھی اس موقع پر خوشی کا اظہار کیا ہے۔ 64 سالہ پرنس چارلس کا کہنا ہے کہ اپنے پہلے پوتے کی پیدائش پر وہ خوشی سے پھولے نہیں سما رہے۔ ابھی تک اس بچے کے نام کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔ شہزادہ ولیم اور کیٹ میڈلٹن اپریل 2011ء میں شادی کے بندھن میں بندھے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں