.

عارضی مطاف کے افتتاح کی تاریخ ابھی طے نہیں ہوئی: احمد

منصوبے کو سو فیصد محفوظ ہونے پر ہی کھولا جائے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں الحرمین الشریفین کے جملہ امور کی نگران پریزیڈنسی نے معذور حاجیوں کے لئے عارضی مطاف کے افتتاح کی تاریخوں کے متعلق سامنے آنے والی تمام رپورٹس کی تردید کردی ہے۔

پریزیڈنسی کے ڈائریکٹر تعلقات عامہ احمد المنصور کا کہنا ہے کہ "اس وقت تک مطاف کے افتتاح کی کوئی تاریخ سامنے نہیں آئی ہے۔" یہ بات انہوں نے گذشتہ چند دنوں سے ذرائع ابلاغ میں چھپنے والی رپورٹس کی تردید کرتے ہوئے کہی. ان رپورٹس میں وہیل چئیر پر سوار حاجیوں کے لئے اونچائی پر بنائے گئے مطاف کے علاقے کے افتتاح کی تاریخ کے بارے میں مختلف قیاس آرائیاں کی گئی تھیں۔

ان کا کہنا تھا کہ،"ہم مطاف کی تعمیر کو جلد از جلد مکمل کرنے کے لئے دن رات ایک کیا ہوا ہے۔ اس مطاف کے افتتاح سے قبل کچھ معاملات طے ہونا باقی ہیں اور ان میں اس پراجیکٹ کو چلا کر اس کی کاردگی پرکھنا بھی شامل ہے۔" ان کا کہنا تھا کہ وہیل چئیر پر سوار حاجیوں کے لئے مطاف کا افتتاح صرف اسی صورت میں کیا جائے گا جب اس کی افادیت 100 فیصد یقینی ہوجائیگی۔

احمد المنصوری کا کہنا تھا کہ مطاف ایک دائرے کی شکل میں تعمیر کیا گیا ہے اور 12 میٹر چوڑا اور 34 میٹر بلند ہے۔ یہ پلیٹ فارم اونچائی پر بنانے کا مقصد معذور اور بزرگ افراد کو اس وقت تک طواف کی سہولت فراہم کرنا ہے جب تک مطاف کی توسیع کا کام مکمل نہیں ہو جاتا۔

اس عارضی مطاف کی دو منزلیں ہوں گی جن میں سے اوپر والی منزل مسجد الحرام کے پہلی منزل سے متصل ہے اور اس میں دو مرکزی اور ذیلی دروازے ہیں اور ایک ہنگامی راستہ ہے۔ یہ منزل اسی رمضان میں کھلنے کا امکان ہے۔ نچلی منزل کو مسجد الحرام کے گرائونڈ فلور کے ساتھ ملایا جائے گا اور اس کا افتتاح عمرہ سیزن کے بعد کیا جائے گا۔

یہ تمام انتظامات مسجد الحرام میں رمضان کے دوران دس لاکھ عازمین کی آمد کے لئے کئے جارہے ہیں۔ مسجد الحرام میں رمضان کے دوران عازمین کی تعداد میں خاطر خواہ اضافہ دیکھنے میں آتا ہے خاص طور پر رمضان کے آخری عشرے کے دوران عازمین کی تعداد بڑھ جاتی ہے۔