.

ٹرین میں 218 مسافر سوار تھے، ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ

اسپین میں ٹرین حادثہ، کم از کم 60 افراد ہلاک، 70 زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسپین کے شمال مغرب میں پیش آنے والے ایک ٹرین حادثے میں کم از کم ساٹھ افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔ ٹرین کی زیادہ تر بوگیاں پٹری سے اتر گئی ہیں۔ اس حادثے میں ستّر سے زائد افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔

حکام کے مطابق یہ حادثہ ہائی اسپیڈ ٹرین اسٹیشن سانتیاگو ڈی کومپسٹیلا کے قریب پیش آیا۔ رات گئے علاقائی حکومت کے سربراہ البیرٹو نونیس فائجو کا مقامی ریڈیو سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ گالیسیا میں پیش آنے والے اس حادثے میں پچاس سے پچپن کے درمیان افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔ ان کے مطابق ستّر سے زائد مسافر زخمی ہیں اور ان میں سے بیس کی حالت تشویش ناک ہے۔ زخمیوں کو قریبی ہسپتالوں میں داخل کرا دیا گیا ہے۔

جائے حادثہ پر موجود ایک فوٹو گرافر کا نیوز ایجنسی "اے پی" سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ درجنوں لاشوں کو ٹرین کی تباہ شدہ بوگیوں سے نکالا گیا ہے۔

اسپین کے محمکہ ریلوے کی طرف سے جاری ہونے والے ایک بیان کے مطابق حادثے کے وقت ٹرین پر تقریباﹰ 218 افراد سوار تھے۔ بیان کے مطابق ابھی تک یہ نہیں پتہ چلا ہے کہ ٹرین پر عملے کے کتنے افراد موجود تھے۔ محمکہ ریلوے کی جانب سے ہلاکتوں کے بارے میں فی الحال کوئی اعداد و شمار نہیں دیے گئے ہیں۔

مقامی ٹیلی وژن پر دکھائے جانے والے مناظر سے پتہ چلتا ہے کہ ابھی بھی مسافر مختلف بوگیوں میں پھنسے ہوئے ہیں اور انہیں نکالنے کی کوششیں جاری ہیں۔ حادثے کی شکار ہونے والی ٹرین دارالحکومت میڈرڈ سے ایلفیرول جا رہی تھی۔ مقامی وقت کے مطابق یہ حادثہ شام آٹھ بجکر بیالیس منٹ پر پیش آیا۔ پبلک ٹیلی وژن ’ٹی وی ای‘ پر مقامی لوگوں سے خون عطیہ کرنے کی اپیل کی گئی ہے۔

ملکی وزیراعظم ماریانو راخوئے نے ٹوئٹر پر جاری کردہ ایک بیان میں متاثرین سے ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا، ’’میں سینتیاگو میں خوفناک ریل گاڑی کے حادثے کے متاثرین کے ساتھ اپنی محبت اور یکجہتی کا اظہار کرنا چاہتا ہوں۔‘‘

ملکی وزیراعظم ماریانو راخوئے آج جمعرات کو جائے وقوعہ کا دورہ کریں گے اور ممکنہ طور پر وہ زندہ بچ جانے والے زخمیوں کی عیادت بھی کریں گے۔ فوری طور پر ٹرین حادثے کی وجوہات معلوم نہیں کی جا سکی ہیں۔ حکام نے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔