مصر میں تشدد پر امریکی وزیر خارجہ کی "گہری تشویش"

"قاہرہ میں عبوری حکومت کو امریکی خدشات سے آگاہ کر دیا ہے"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکا نے مصر میں پیش آنے والے پرتشدد واقعات پر’’گہری تشویش‘‘ کا اظہار کیا ہے۔ اس حوالے سے امریکی وزیر خارجہ جان کیری کا کہنا تھا کہ مصر ایک نازک موڑ پر کھڑا ہے۔ کیری کا مزید کہنا تھا کہ ’’دو برس قبل مصر میں انقلاب کا آغاز ہوا تھا۔ اس کا کیا نتیجہ ہو گا یہ ابھی طے نہیں ہے، لیکن جو کچھ اس وقت ہو رہا ہے اس کے اثرات آنے والے نتیجے پر ضرور پڑیں گے۔‘‘

امریکی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ مصری حکومت پر لازم ہے کہ وہ لوگوں کے اظہار رائے اور ان کے پر امن مظاہروں کے حق کو تسلیم کرے۔ ’’تشدد سے نہ صرف یہ کہ مصر میں جمہوریت کے استحکام کو نقصان پہنچے گا بلکہ اس سے خطے کے استحکام پر بھی منفی اثرات پڑیں گے۔‘‘

جان کیری کا کہنا تھا کہ انہوں نے امریکا کے خدشات سے مصر کے عبوری نائب وزیر اعظم محمد البراداعی اور عبوری نائب وزیر خارجہ نبیل فہمی کو آگاہ کر دیا ہے۔

ادھر یورپی یونین نے مصری دارالحکومت قاہرہ میں مظاہرین کے خلاف کی جانے والی سکیورٹی فورسز کی کارروائی کی مذمت کی ہے۔

یورپی یونین کے خارجہ امور کی سربراہ کیتھرین آشٹن نے ایک بار پھر سیاسی قیدیوں بشمول معزول صدر محمد مرسی کی رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔ اس کے علاوہ انہوں نے سویلین حکومت کی بحالی کا مطالبہ بھی کیا۔ ایک بیان میں آشٹن نے فریقین کو ضبط اور تحمل کی تلقین کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں