سکیورٹی خدشات: دنیا بھر میں اتوار کو متعدد امریکی سفارت خانے بند کرنے کا اعلان

سفارت خانے حفظ ماتقدم کے طور پر بند کیے جا رہے ہیں: خاتون ترجمان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکا نے آیندہ اتوار کو سکیورٹی خدشات کے پیش نظر دنیا بھر میں اپنے متعدد سفارت خانے بند کرنے کا اعلان کیا ہے۔

امریکی محکمہ خارجہ کی خاتون ترجمان میری حرف کا کہنا ہے کہ سفارت خانے حفظ ماتقدم کے طور پر بند کیے جارہے ہیں لیکن انھوں نے یہ بتانے سے گریز کیا ہے کہ کون سے مشنوں کو اور کہاں بند رکھا جائے گا اور نہ یہ بتایا ہے کہ امریکی سفارت خانوں کو کیا خطرات لاحق ہوسکتے ہیں۔

میری حرف نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ''محکمہ خارجہ نے متعدد امریکی سفارت خانوں اور قونصل خانوں کو اتوار 4 اگست کو بند رکھنے یا معمول کی سرگرمیاں معطل رکھنے کی ہدایت کی ہے''۔

انھوں نے کہا کہ ''یہ فیصلہ ہمارے ملازمین کے علاوہ ہماری تنصیبات پر آنے والے لوگوں کے تحفظ کے پیش نظر کیا گیا ہے''۔انھوں نے واضح کیا کہ سفارت خانے صرف اتوار ہی کو بند رہیں گے اور اس کے بعد ان کو دوبارہ کھولنے کا جائزہ لیا جائے گا۔لہٰذا اس بات کا بھی امکان ہے کہ ان سفارت خانوں کو مزید کچھ دن کے لیے بند رکھا جائے۔

خاتون ترجمان نے یہ بتانے سے گریز کیا ہے کہ دنیا کے کس حصے میں امریکی سفارت خانوں کو درپیش خطرے کا پتا چلا ہے۔ واضح رہے کہ امریکا میں اتوار کو ہمیشہ سرکاری دفاتر بند ہوتے ہیں لیکن بہت سے مسلم اکثریتی ممالک میں اس روز نئے ہفتے کا آغاز ہوتا ہے اوروہاں چھٹی نہیں ہوتی ہے۔

امریکا گذشتہ سال 11 ستمبر کو لیبیا کے دوسرے بڑے شہر بن غازی میں قونصل خانے پر حملے کے بعد سے دوسرے ممالک میں اپنے سفارتی مشنوں کی سکیورٹی کے حوالے سے بہت محتاط ہے۔اس حملے میں لیبیا میں متعین امریکی سفیر سمیت چار اہلکار ہلاک ہوگئے تھے۔اس واقعہ پر امریکی کانگریس نے محکمہ خارجہ پر سفارت خانوں کو مناسب سکیورٹی مہیا نہ کرنے کا الزام عاید کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں